پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کے فیصلے کو ہائیکورٹ میں چیلنج کرے گی، اسد عمر



تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر نے الیکشن کمیشن کے پی ٹی آئی کے خلاف ممنوعہ فنڈنگ کے فیصلے کو ہائی کورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان کر دیا۔

اسلام آباد میں تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر نے دیگر پارٹی رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کے ایک سرٹیفیکیٹ کو بیان حلفی بنا کر تماشا لگایا جارہا ہے۔ عمران خان نے اپنے اثاثوں کا نہیں پارٹی فنڈنگ کے لیے سرٹیفیکیٹ جمع کرایا تھا۔ تمام تفصیلات الیکشن کمیشن کو دی ہیں سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ممنوعہ فنڈنگ کا۔ انہوں نے الیکشن کمیشن سے کہا کہ تحریک انصاف سمیت پیپلز پارٹی اور ن لیگ کی فنڈنگ کی تفصیلات شیئر کر دے۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ بیرون ملک کے پیسوں کی ترسیل سے ہی تو ملک کی معیشت کھڑی ہے، پیسے کے بغیر سیاست ہو نہیں سکتی۔ جلسوں ، بینرز اور جھنڈے لگانے کے لیے پیسے چاہیئے ہوتے ہیں۔ فنڈنگ کا راستہ روک کر ہماری سیاست کو ختم کرنا چاہتے ہیں۔ فیصلے کو ہائی کورٹ میں چیلنج کیا جائے گا۔

اس موقع پر فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی بھی امریکہ بھی ایل ایل سی کے طور پر رجسٹرڈ ہے۔ ن لیگ اور پیپلز پارٹی کی ممنوعہ فنڈنگ پر کوئی پیش رفت نہیں کی گئی، پی ٹی آئی کو ہوئی فنڈنگ عمران خان کے لیے ذاتی نہیں ہے بلکہ ساری پارٹی کے لیے ہوئی۔

ہیلی کاپٹر حادثے میں پاک فوج کے افسران کی شہادت سے متعلق بات کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ جنرل سرفراز ایک شاندار افسر ہونے کے ساتھ ساتھ ایک بہترین افسر تھے۔ میں ذاتی طور پر بھی جنرل سرفراز سے ملا ہوں،وہ بلوچستان کی عوام کے لیے درد رکھنے والے انسان تھے۔ غم کی اس گھڑی میں پاک فوج اور لواحقین کے ساتھ ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More