پاکستانی نوجوانوں میں دنیا کا ہر میدان فتح کرنے کی صلاحیت موجود ہے

اسلام آباد: وزیر اعظم کی زیرِ صدارت نیشنل اسپورٹس پالیسی کےانتظامی ڈھانچے کی ازسرِ نو تشکیل سے متعلق اجلاس ہوا۔ پالیسی پر صوبوں سے مشاورت اور کھیلوں کے فروغ کیلئے اقدامات پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ وزیر اعظم عمرا ن خان کی جاری منصوبوں پر کام معینہ مدت میں مکمل کرنے کی ہدایت کردی۔

وزیرِ اعظم عمران خان کی زیرِ صدارت نیشنل اسپورٹس پالیسی اور پاکستان اسپورٹس بورڈ کے انتظامی ڈھانچے کی ازسرِ نو تشکیل پر اعلی سطح کا اجلاس ہوا جس میں وزیر بین الصوبائی رابطہ ڈاکٹر فہمیدہ مرزا، وزیرِ مملکت برائے اطلاعات و نشریات فرخ حبیب، چاروں صوبوں کے کھیلوں کے وزراء، چیئرمین پاکستان اسپورٹس بورڈ اور متعلقہ اعلی حکام کی شرکت. وزیرِ اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے اجلاس میں وڈیو لنک کے ذریعے شرکت کی۔

اجلاس کے دوران شرکا کو پاکستان اسپورٹس بورڈ کے انتظامی ڈھانچے، نیشنل اسپورٹس پالیسی، اس حوالے سے صوبوں سے مشاورت اور کھیلوں کے فروغ کے لئے اقدامات پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ پاکستان اسپورٹس بورڈ کا آئینی مسودہ تیار ہے جس کے تحت بورڈ اور ایگزیکیٹیو کمیٹی کے ممبران کی تعداد کو محدود رکھا گیا ہے۔ بورڈ کے اختیارات و ذمہ داریوں کا تعین کرتے ہوئے ملک میں کھیلوں کے فروغ اور مثبت مقابلے کی فضا کے قیام کا خاص خیال رکھا گیا ہے۔

اس موقع پر وزیرِ اعظم عمران خان نے جاری منصوبوں پر کام معینہ مدت میں مکمل کرنے کی ہدایت کی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی نوجوانوں میں دنیا کا ہر میدان فتح کرنے کی صلاحیت موجود ہے، ملک میں کھیلوں میں نواجوانوں کی شرکت بڑھنے سے کھیلوں کا معیار بہتر ہوگا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ نوجوانوں کو کھیلوں کی سہولیات فراہم کرنا حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے، مقامی سطح پر کھیلوں میں شرکت کو یقینی بنا کر با صلاحیت نوجوانوں کو مواقع فراہم کیے جائیں گے، پاکستان اسپورٹس بورڈ نوجوانوں کو کھیلوں کی معیاری سہولیات کی فراہمی یقینی بنائے گا اور ریگولیٹر کے طور پر کام کرے گا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More