اہم خبریں تازہ ترین دنیا نیوز ٹکر

واشنگٹن: ٹرمپ انتظامیہ کا سعودی عرب کو یورینیم فروخت پابندی نرم کرنے کا فیصلہ

واشنگٹن: (13 دسمبر 2017) امریکی ٹی وی نے دعویٰ کیاہے کہ ٹرمپ انتظامیہ نے سعودی کویورینیم فروخت کرنے پر پابندیوں میں نرمی کا فیصلہ کرلیاہے۔ وائٹ ہاؤس ریاض کے ساتھ ایٹمی معاہدے کی تفصیلات طے کرنے پر آج غور کرے گا۔

امریکی ٹی وی بلوم برگ ایک رپورٹ میں دعویٰ کیاکہ ٹرمپ انتظامیہ کا ایک اہم اجلاس آج وائٹ ہاؤس میں ہوگا۔ جس میں سعودی عرب کے ساتھ ایٹمی معاہدے کی تفصیلات طے کی جائیں گی۔ معاہدے کے تحت امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سعودی عرب کو امریکی ایٹمی ٹیکنالوجی اور یورینیم فروخت کرنا چاہتے ہیں۔ تاکہ دیوالیہ پن کا شکار امریکا کی ایٹمی ٹیکنالوجی بنانے والی کمپنیاں دوبارہ سنبھل جائیں۔

اوباما انتظامیہ نے سعودی عرب کو یورینیم کی فروخت پر پابندی عائد کردی تھی۔ اب ڈونلڈ ٹرمپ یہ پابندیاں نرم کرنا چاہتے ہیں۔ ان کی کوشش ہے کہ پابندیاں نرم ہونے سے سعودی عرب امریکا سے ایٹمی ٹیکنالوجی خریدنے کو ترجیح دے گا۔ ایٹمی ٹیکنالوجی کمپنی ویسٹنگ ہاؤس کے حکام نے سعودی عرب سے متعلق ٹرمپ انتظامیہ کے فیصلے کا خیرمقدم کیاہے۔ امریکی ٹی وی کے مطابق سعودی عرب آئندہ بیس سے پچیس برس تک ملک میں سولہ ایٹمی پاور پلانٹ بنانا چاہتاہے۔امریکی پابندیوں کے باعث روس اور چین سے تعاون کی کوشش کررہا تھا۔

یہ بھی پڑھیے

مقبوضہ بیت المقدس اور مغربی کنارے کا سفر نہ کیا جائے، امریکی وزارت خارجہ

عرب لیگ کا ہنگامی اجلاس: امریکی صدر کے اعلان کی مذمت

Related posts

پیپلز پارٹی نے ایم کیو ایم پاکستان کو کرارا جواب دے دیا

shakir shaikh

وزیر اطلاعات پنجاب کا بھی بلاول بھٹو کے بیان پر سخت مایوسی کا اظہار

faraz ahmed

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کل 2 روزہ دورے پر چین پہنچیں گے

faraz ahmed

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More