اہم خبریں عدالتیں اور مقدمے نیوز ٹکر پاکستان

اسلام آباد ہائی کورٹ کا اںصاف، چھتیس سال بعد خاتون کو گھر کا قبضہ مل گیا

اسلام آباد:(20دسمبر2017)اسلام آباد کے مہنگے ترین علاقے ای سیون میں خاتون چھتیس سال بعد اپنے مکان کا قبضہ وکیل سے واپس لینے میں کامیاب ہوگئی، مالک مکان نے قبضہ واپس ملنے پر کمرہ عدالت میں اللہ کا شکر ادا کیا۔

 تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس شوکت عزیزصدیقی نے خاتون کے گھر پر قبضے کے خلاف  دائر درخواست پر سماعت کی، عدالت کے استفسارپرپولیس انسپکٹراسجد محمودنے بتایا کہ عدالتی حکم پر عملدرآمد کرتے ہوئے مکان کا قبضہ درخواست گزارکو دے دیا گیا ہے۔

عدالتی کارروائی مکمل ہونے کے بعد خاتون کے شوہر نےجسٹس شوکت صدیقی کا شکریہ ادا کرتے کہا کہ آپ جیسے جج ہوں گے تومظلوموں کو انصاف ضرور ملے گا، میں اللہ کا شکرادا کرتا ہوں جس نے یہ دن دیکهنے کا موقع دیا۔عدالت نے گزشتہ سماعت پر توہین عدالت کے مرتکب ہونے والے دونوں وکلا کی عدم حاضری پر برہمی کا اظہار کرتے کہا ہے کہ آئندہ سماعت تک دونوں وکلاء کے نام ووٹر لسٹ سے نکال دئیے جائیں۔

دونوں وکلا کو توہین عدالت کے نوٹس دوبارہ جاری کرتے ہوئے نوجنوری کو پیش ہونے کا حکم دےدیاجج کا کہنا تھا کہ وکلا کے پیش نہ ہونے کی صورت میں ان کی گرفتاری کا حکم دیں گے۔واضح رہے کہ اٹھارہ دسمبر کو عدالتی کارروائی کے دوران جسٹس شوکت عزیز صدیقی سے بدتمیزی کرنے والے دونوں وکلا کے لائسنس معطل کردئیے گئے تھے جبکہ ایک وکیل کو گرفتار بھی کرلیا گیا تھا، ایڈووکیٹ سہیل احمد پر اسلام آباد کے سیکٹر ای سیون پلاٹ پر قبضے کا الزام تھا۔ جس کا آج اسلام آباد ہائی کورٹ نے فیصلہ سنادیا ہے۔

:یہ بھی پڑھئیے

عمران فاروق قتل کیس: بانی ایم کیو ایم کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

سرگودھا: وکلا کے خاتون اسسٹنٹ کمشنر کو آفس میں بند کرنے کیخلاف مقدمہ درج

Related posts

نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے قومی ٹیم کو آخری وارننگ جاری کردی

nehal qavi

پی ایس ایکس کو خود مختار ادارہ بنانا چاہتے ہیں، مشیر خزانہ

shakir shaikh

وزیراعظم کا لندن میں بہت بڑا سیکنڈل آنے والا ہے، آصف زرداری

faraz ahmed

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More