شیری رحمان کا ادارہ شماریات کی مہنگائی سے متعلق رپورٹ پر تشویش کا اظہار

اسلام آباد: نائب صدر پیپلز پارٹی سینیٹر شیری رحمان نے ادارہ شماریات کی مہنگائی سے متعلق رپورٹ پر شدید تشویش کا اظہارکیا ہے۔

ایک بیان میں سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ اس حکومت کے 3 سال میں کھانے پینے کی اشیاء میں دو گنا اضافہ ہوا، گزستہ 3 سال میں گھی 133 فیصد، آٹا 52 فیصد، دالیں 76 فیصد اور چینی 84 فیصد مہنگی ہوئی، پیٹرول 49 فیصد، بجلی 57 فیصد جبکہ ایل پی جی کی قیمت میں51فیصد کیا گیا، اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں 133 فیصد تک اضافہ ہوا لیکن حکومت کے کان پر جوں تک نہیں رینگتی، عوام کیلئے یوٹلٹی اسٹور تک کے دروازے بند کر دیے ہیں۔

شیری رحمان نے کہا کہ ہر 15 دن بعد پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کیا جا رہا، یکم نومبر سے حکومت ایک بار پھر پیٹرول کی قیمتوں میں اضافے کا منصوبہ بنا رہی، یہ حکومت اب عوام کے لئے ایک سزا اور عذاب بن چکی ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More