دنیا نیوز ٹکر

بھارت: مسلمان سافٹ ویئر انجینیئر پر ہندو شدت پسندوں کا لینڈ جہاد کا الزام

نئی دہلی (21 دسمبر 2017) بھارت میں ہندو شدت پسندوں نے مسلمانوں کے لئے دھرتی تنگ کردی ہے۔ میرٹھ شہر میں ایک مسلمان سافٹ ویئر انجنیئر کو خریدے گئے نئے گھر میں رہنے نہیں دیا گیا اور اس پر لینڈ جہاد کا الزام لگا دیا گیا۔

بھارت میں ہندو شدت پسندوں نے مسلمانوں کے لئے دھرتی تنگ کردی ہے۔ میرٹھ شہر میں ایک مسلمان سافٹ ویئر انجنیئر کو خریدے گئے نئے گھر میں رہنے نہیں دیا گیا اور اس پر لینڈ جہاد کا الزام لگا دیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اترپردیش کے شہر میرٹھ میں ایک مسلمان سافٹ ویئر انجنیئر احمد نے رواں ماہ گھر خریدا تھا۔

17دسمبر کو وہ میرٹھ آئے تو ہندو شدت پسندوں نے ان کے خلاف لینڈ جہاد کا واویلہ شروع کردیا اور احمد کے خاندان کو نئے گھر میں رہنے نہیں دیا گیا۔ اس سے پہلے انہی ہندو شدت پسندوں نے ہندو لڑکیوں سے شادی کرنے پر مسلمانوں پر لو جہاد کا الزام لگایا اور اب نیا الزام لگا کر مسلمانوں کو ریاست اور بھارت بدر کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

لو جہاد کے الزام میں متعدد مسلمان قتل کئے گئے اور کچھ کے خلاف آج تک مقدمات چل رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیئے

سانحہ آرمی پبلک اسکول پشاور کے شہداء کی تیسری برسی آج منائی جارہی ہے

بھارت کا معاندانہ رویہ برقرار:پاکستان میں ایمرجنگ ایشیاکپ کے انعقاد پر اعتراض اٹھادیا

Related posts

آشیانہ اقبال اسکینڈل کیس کی سماعت 21 اگست تک ملتوی

shakir shaikh

بھارتی حکام نے نوجوت سدھو کو واہگہ کے راستے پاکستان آنے سے روک دیا

shakir shaikh

وزیر اعظم عمران خان دو روزہ دورے پر قطر پہنچ گئے

faraz ahmed

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More