تازہ ترین
زلفی بخاری کی تقرری سپریم کورٹ میں چیلنج

زلفی بخاری کی تقرری سپریم کورٹ میں چیلنج

اسلام آباد: (26 ستمبر 2018)وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی زلفی بخاری کی تقرری سپریم کورٹ میں چیلنج کر دی گئی ہے،درخواست میں وزیراعظم عمران خان اور کابینہ ڈویژن کو فریق بنایا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق آئینی درخواست محمد عادل چٹھہ کی جانب سے دائر کی گئی ہے، درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ زلفی بخاری کو بطور معاون خصوصی کام کرنے سے روکا جائے،کیونکہ وہ دہری شہریت رکھتے ہیں اورآئین پاکستان کے تحت دہری شہریت کا حامل شخص کابینہ کا رکن نہیں بن سکتا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ معاون خصوصی نے بھی وہی ذمہ داریاں ادا کرنی ہیں جو منتخب رکن اسمبلی کرتا ہے، جو کام براہ راست نہیں ہوسکتا وہ بلاواسطہ بھی نہیں کیا جاسکتا، لہذا زلفی بخاری کی نامزدگی غیر قانونی قرار دی جائے،درخواست میں وزیراعظم عمران خان اور کابینہ ڈویژن کو فریق بنایا گیا ہے۔

یاد رہے کہ اٹھارہ ستمبر کو وزیراعظم ہاؤس کی جانب سے زلفی بخاری کی بطور وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سمندر پار پاکستانی کی تقرری کا نوٹی فکیشن جاری کیا گیا تھا، نوٹی فکیشن کے مطابق زلفی بخاری کو وزیرمملکت کا درجہ دیا گیا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

دوسری جانب زلفی بخاری کا نام آف شور کمپنیوں کے باعث پاناما لیکس میں بھی آیا ہئ جس بناء پر نیب میں ان کے خلاف تحقیقات جاری ہیں اور اس سلسلے میں وہ کئی بار نیب میں پیش بھی ہوچکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

آف شور کمپنیوں کی تحقیقات :زلفی بخاری کو نیب نے ایک بارپھر طلب کرلیا

راولپنڈی: زلفی بخاری کی نیب میں پیشی

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top