تازہ ترین
امریکا کے مستقل مندوب کے عہدے کیلئے خاتون سفارت کار ڈینا پاؤل کے نام پر غور

امریکا کے مستقل مندوب کے عہدے کیلئے خاتون سفارت کار ڈینا پاؤل کے نام پر غور

واشنگٹن: (11 اکتوبر 2018) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے وہ اقوام متحدہ میں امریکا کے مستقل مندوب کے عہدے کیلئے خاتون سفارت کار ڈینا پاؤل کے نام پر غور کررہے ہیں۔

بینک میں ایگزیکٹو کےعہدے پر کام کرنے کے ساتھ ماضی میں وائٹ ہاؤس میں مشیر کی خدمات بھی انجام دے چکی ہیں۔ عرب ٹی وی کے مطابق امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ان افواہوں کی سختی سے تردید کہ وہ اپنی صاحبزادی ایوانکا ٹرمپ کو اقوام متحدہ میں امریکا کی سفیر مقرر کرنا چاہتے ہیں۔ اقوام متحدہ میں امریکا کی بھارتی نژاد مندوب نِکی ہیلی نے رواں سال کے آخر تک اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا ہے۔ٹرمپ نے منگل کے روز ان کا استعفیٰ منظور کرلیا تھا۔

مصری نژاد ڈینا پاؤل ٹرمپ انتظامیہ میں شامل رہ چکی ہیں۔ اس کے علاوہ وہ قومی سلامتی کمیٹی کی نائب مشیر بھی رہی ہیں۔ وہ مشرق وسطیٰ میں سفارتی امور بھی انجام دے چکی ہیں۔اس سے قبل یہ علم ہوا تھا کہ ٹرمپ سلامتی کونسل میں امریکی مندوب نکی ہیلے عہدے کے استعفے کے بعد اس عہدے کیلئے ایوانکا کو منتخب کرنے پر غور کر رہے ہیں ان کا کہنا ہے کہ اس تقرری سے مجھ پر اقربا پروری کا الزام لگایا جائے گا۔

دوسری جانب ٹرمپ کے بیان پر ایوانکا نے فوری ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ وہ سلامتی کونسل کے لیے مندوب کی دوڑ میں شامل نہیں، وہ وائٹ ہاؤس میں اپنی ذمے داریوں سے خوش ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

ایوانکا سلامتی کونسل میں ڈائنامائٹ ثابت ہوں گی، ڈونلڈ ٹرمپ

اقوام متحدہ میں تعینات امریکی سفیر نکی ہیلی مستعفی

Comments are closed.

Scroll To Top