تازہ ترین
کراچی : ڈیفنس میں ملزمان کا گھریلو ملازمہ سے زیادتی اور بدترین تشدد

کراچی : ڈیفنس میں ملزمان کا گھریلو ملازمہ سے زیادتی اور بدترین تشدد

کراچی: (14 ستمبر 2017)کراچی کے علاقے ڈیفنس میں گھریلوملازمہ بدترین تشد کا نشانہ بن گئی۔ ملزمان نے پہلےلڑکی سے زیادتی کی اور پھر استری سے جلا کر بدکردار بھی قرار دے دیا۔ پولیس نے ملزمان کو گرفتار کرکے تفتیش شروع کردی۔ آئی جی سندھ کا نوٹس رپورٹ طلب۔

کراچی کا علاقہ ہے ڈیفنس جہاں سولہ سالہ ملازمہ جویریہ رفیع کو پہلے مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا ہے پھر استری سے جلایاجاتا ہے۔ مظلوم بیٹی کا باپ جب پولیس کو رپورٹ لکھاتا ہے تو الٹا متاثرہ لڑکی پر بدکرداری کا الزام بھی لگایا جاتا ہے۔ پولیس نےوالد کی رپورٹ پرمکان مالک عبد الرزاق، اس کے دوست حسیب اور بلڈنگ کے چوکیدار شاہین گل جبکہ عبدالرزاق کی بیوی مریم اور ملازمہ فاطمہ کو حراست میں لے لیا ہے۔ گرفتار ملزمان کا موقف ہے کہ جویریہ نشہ آور گولیاں کھلاکر گھروالوں کو سلادیا کرتی تھی اور غلط کاموں میں ملوث تھی۔ بلڈنگ کا چوکیداربھی اپنی صفائی دیتا رہا۔ ایس ایچ او اورنگزیب خٹک کو شک ہے کہ تفتیش میں ملزمان غلط بیانی سے خود کو بچانے کی کوشش کررہے ہیں۔

ستم بالائے ستم کہ گرم استری سے جلنے والی ملازمہ کو جب پولیس نے ایم ایل او کے لئے اسپتال بھیجا تو وہاں کوئی لیڈی ڈاکٹر دستیاب نہ تھی۔ پی ٹی آئی رہنما خرم شیر زمان متاثرہ لڑکی کو جناح اور سول میں دھکے کھانے والوں بلاآخر ٹراما سینٹر پہنچانے میں کامیاب ہوگئے۔ ملازمہ سے ہونے والی زیادتی اور تشدد کا آئی جی سندھ نے فوراً نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

اسلام آباد: ایک اور گھریلو ملازمہ تشدد کا شکار ہوگئی

لاہور: چوری کے الزام میں میاں بیوی کا دس سالہ گھریلو ملازمہ پر تشدد

Comments are closed.

Scroll To Top