تازہ ترین
قصور ویڈیو اسکینڈل: انسداد دہشتگردی عدالت کا 3 ملزمان کو بری کرنے کا حکم

قصور ویڈیو اسکینڈل: انسداد دہشتگردی عدالت کا 3 ملزمان کو بری کرنے کا حکم

انسداد دہشت گردی عدالت نے قصور ویڈیو اسکینڈل میں نامزد تین ملزمان کو جرم ثابت نہ ہونے پر بری کرنے کا حکم دے دیا۔ دوسری جانب لاہور کی سیشن عدالت نے اجتماعی زیادتی کیس کے ملزمان کی درخواست ضمانت خارج کردی۔ ملزمان پر چودہ سالہ طالبہ کے ساتھ زیادتی کا الزام ہے۔

لاہور کی انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج چوہدری محمد الیاس نے قصور ویڈیو اسکینڈل کے تین ملزمان کو بری کرنے کا حکم دے دیا۔ ملزمان کے خلاف یکم اکتوبر دو ہزار پندرہ کو منظور بھٹی کی مدعیت میں تھانہ گنڈا سنگھ میں ملزم محمد ارشد، اشفاق احمد اور محمد ابراہیم کے خلاف زیادتی کا مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

درخواست گزاروں کے وکلا نے مؤقف اختیار کیا کہ زرعی اراضی کے تنازعہ پر انہیں جھوٹے مقدمے میں ملوث کیا گیا ہے۔ عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد تینوں ملزمان کو بری کرنے کا حکم دے دیا۔ ملزمان کو آج کیمپ جیل لاہور سے رہا کیے جانے کا امکان ہے۔

دوسری جانب ایڈیشنل اینڈ سیشن جج نجف شہزادی نے ملزم ماجد، حارث، بلاول اور عمران کی درخواست ضمانت پر سماعت کی۔ درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ ان کے خلاف تھانہ ریس کورس میں چودہ سالہ طالبہ سے اجتماعی زیادتی کاجھوٹا اور بے بنیاد مقدمہ درج کیا گیا۔

سرکاری وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ملزمان کے خلاف ٹھوس شواہد موجود ہیں۔ عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد چاروں ملزمان کی درخواست ضمانت خارج کردی۔

Comments are closed.

Scroll To Top