تازہ ترین
سندھ ہائیکورٹ کا این ٹی ایس کے نتائج برقرار رکھنے کا حکم

سندھ ہائیکورٹ کا این ٹی ایس کے نتائج برقرار رکھنے کا حکم

کراچی: (05 دسمبر 2017) سندھ ہائی کورٹ نے این ٹی ایس سے متعلق وزیر اعلی سندھ کے نوٹیفیکشن کو کالعدم قرار دیتے ہوئے امتحانی نتائج برقرار رکھنے کا حکم دیا ہے۔

ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں این ٹی ایس سے متعلق درخواستوں کی سماعت ہوئی ،جس میں درخواست گزار نے موقف اختیار کیا تھا کہ این ٹی ایس ٹیسٹ میرٹ پر دیا تھا،سندھ حکومت کی جانب سے پیپرمنسوخ کرناغیرقانونی ہے،ہم ٹیسٹ میں پاس ہوئے،دوبارہ ٹیسٹ غیر قانونی ہے۔

درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کرتے ہوئے کہا تھا کہ سندھ حکومت کے دوبارہ پیپر لینے کے نوٹیفکیشن کو کالعدم قرار دیا جائے۔
عدالت نے دلائل سننے کے بعد این ٹی ایس کے نتائج کو برقرار رکھنے کا حکم دیتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دے دیا اور اپنے ریمارکس میں کہا ہے کہ کوئی فریق چاہے توسپریم کورٹ سے رجوع کرسکتاہے۔

عدالتی احکامات کے بعد طلبہ نے کورٹ میں مٹھائیاں تقسیم کیں۔ طلبہ کا کہنا تھا عدالتی فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں، محنت کی تھی اس کا پھل مل گیا۔ انہوں نے کہا مستقبل میں ڈاکٹر بن کر قوم کی خدمت کرینگے۔

واضح رہے کہ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے دوبارہ امتحان لینے سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کیا تھا جبکہ میڈیکل کے طلبہ نے این ٹی ایس ٹیسٹ کی منسوخی کیلئے عدالت سے رجوع کر رکھا تھا۔یاد رہے کہ سندھ ہائی کورٹ نے پہلے ہی نیشنل ٹیسٹنگ سروس(این ٹی ایس) کو اعلیٰ تعلیمی اداروں اور سرکاری ملازمتوں کے لیے امیدواروں سے ٹیسٹ لینے سے روکنے کا حکم دے رکھا ہے ۔

یہ بھی پڑھیے

چیئرمین نیب کا این ٹی ایس کے خلاف تحقیقات کا حکم

سندھ اسمبلی:میڈیکل کالجز میں داخلہ ٹیسٹ آئی بی اے اور این ٹی ایس سے کرانے کی قراردادیں منظور

Comments are closed.

Scroll To Top