تازہ ترین
سپریم کورٹ کا منرل واٹر کمپنیوں کے پانی استعمال کا ازخود نوٹس

سپریم کورٹ کا منرل واٹر کمپنیوں کے پانی استعمال کا ازخود نوٹس

اسلام آباد:(14ستمبر 2018) سپریم کورٹ نے ملک بھر میں منرل واٹرکمپنیوں کی جانب سے پانی استعمال کاازخود نوٹس لیتے ہوئے تمام منرل واٹر کمپنیوں سے آج شام تک تفصیلات طلب کرلیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار نے کٹاس راج مندرتالاب خشک ہونے سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران منرل واٹرکمپنیوں کے پانی استعمال کاازخود نوٹس لیا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ منرل واٹرکمپنیاں کتناپانی استعمال کر رہی ہیں ؟ جو پانی نکال کر بیچا جاررہا، اس کی کوئی قیمت ادا کر رہے ہیں یا نہیں ؟ کراچی سمیت ملک بھر کی منرل واٹر کمپنیوں والے کل لاہورآ جائیں، سماعت لاہور رجسٹری میں ہوگی، ساتھ ہی چیف جسٹس نے صوبائی ایڈووکیٹ جنرلز سے پانی استعمال کی تفصیلات آج شام تک طلب کرلیں ہیں۔

اس سے قبل سپریم کورٹ میں آبیانہ کی رقم کے تعین سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔

دوران سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ پانی کے معاملے پر ایک کمیٹی بنا رہے ہیں، جس میں میں مخدوم علی خان، سلمان اسلم بٹ شامل ہوں گے۔

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا کہ محکمہ آبپاشی کو پانی کے استعمال پردو ارب کی وصولیاں بنتی ہیں جبکہ دو ارب کے واجبات سے وصولیاں کم ہوئی ہیں،جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیئے کہ ہمارا پانی بہت ضائع ہوجاتا ہے، جس کی وجہ ہمارا نہروں کا نظام اتنا بہترنہیں ہے۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ دیکھنا یہ ہے معاملہ کیا ہے معاملہ پرکیا پالیسی بننی ہے، بیٹھ کرسفارشات تیارکرلیں گے، تمام محکمہ آبپاشی کے سیکرٹریوں کو بلا لیتے ہیںاور ایک قرارداد تیار کرلیتے ہیں،ساتھ ہی چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ لاء اینڈ جسٹس کمیشن معاملہ پرورکشاپ کا انعقاد کرے، ورکشاپ کے ٹی او آرز تیار کیے جائیں گے، سفارشات تیارکرکے حکومت کو دی جائیں گی۔

یہ بھی پڑھیے

سپریم کورٹ میں فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ سے متعلق رپورٹ مسترد

میں بحریہ ٹاؤن کے سامنے سے بھی گزرنا نہیں چاہتا، چیف جسٹس

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top