تازہ ترین
سعودی صحافی جمال خشوگی کی گمشدگی پر تشویش ہے، امریکی صدر

سعودی صحافی جمال خشوگی کی گمشدگی پر تشویش ہے، امریکی صدر

واشنگٹن: (11 اکتوبر 2018) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہاہے کہ سعودی سفارتخانے میں لاپتہ ہونیوالے صحافی سے متعلق سعودی عرب کے اعلیٰ حکام سے رابطے میں ہیں۔ جمال خشوگی کی منگیتر سے ملنے کیلئے انہیں وائٹ ہاؤس بلایا ہے۔

وائٹ ہاؤس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جمالی خشوگی کی گمشدگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ وہ سعودی حکام سے مسلسل رابطے میں ہیں لیکن اصل کہانی جمال کی منگیتر سے پوچھیں گے۔ جنہیں وائٹ ہاؤس بلایا گیا ہے۔ ٹرمپ نے جمال کی منگیتر کے خط ملنے کی بھی تصدیق کی ہے۔ ٹرمپ نے کہا ہے کہ وہ معاملے کے تہہ تک پہنچنا چاہتے ہیں۔ جمال خشوگی سعودی عرب کا شہری اور حکومت کا نقاد ہے۔ جمال کی منگیتر کا کہناہے کہ جمال کو استنبول میں قائم سعودی عرب کے قونصل خانے کی عمارت میں قتل کردیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق امریکا میں مقیم سعودی عرب کے صحافی جمال خشوگی ترکی کے شہر استنبول میں سعودی عرب کے قونصل خانے گئے۔ انہیں اپنی منگیتر کے سفری دستاویزات بنوانے تھے۔ منگیتر کونسل خانے کے باہر گیارہ گھنٹے انتظار کرتی رہی لیکن خشوگی قونصل خانے سے بابر نہیں آئے۔منگیترنے امریکی حکومت اور میڈیا سے رابطہ کیا۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ، اقوام متحدہ، یورپی یونین اور دیگر ممالک نے خشوگی کے قتل کی مذمت کی۔ برطانیہ کے وزیر خارجہ نے مطالبہ کیا کہ سعودی عرب صحافی کے قتل کی وضاحت کرے۔ امریکی نائب صدر مائیک پینس نے پیشکش کی کہ اگر سعودی عرب نے مدد طلب کی تو وہ ایف بی آئی کی ٹیم ریاض اور ترکی بھیجنے کیلئے تیار ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

صحافی کی گمشدگی ترکی اور سعودیہ تعلقات کیخلاف سازش ہو سکتی ہے، ترکی

یورپ، برطانیہ، امریکا،اقوام متحدہ کی صحافی جمال خشوگی کے قتل کی مذمت

Comments are closed.

Scroll To Top