تازہ ترین
صدرمملکت ایک روزہ مختصر دورے پر کوئٹہ پہنچ گئے

صدرمملکت ایک روزہ مختصر دورے پر کوئٹہ پہنچ گئے

کوئٹہ:(14نومبر، 2018)صدرمملکت عارف علوی ایک روزہ مختصر دورے پر کوئٹہ پہنچ گئے، جہاں صدر مملکت گورنر ہاؤس میں صوبائی کابینہ کے اجلاس میں شرکت اورخطاب کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی کابینہ کے اجلاس میں صدر مملکت صوبے میں سی پیک کے تحت جاری منصوبوں کی پیش رفت، امن و امان، معاشی،اقتصادی اور تعلیمی صورتحال کا جائزہ لینگے۔

اس کے علاوہ صدر مملکت سے گورنر بلوچستان امان اللہ یاسین زئی اور وزیراعلیٰ جام کمال علیحدہ، علیحدہ ملاقات کریں گے، اپنے دورے میں صدر مملکت عارف علوی ڈپٹی اسپیکرقومی اسمبلی قاسم خان سوری سے ان کی والدہ کے انتقال پرتعزیت بھی کریں گے۔

گذشتہ روز اسلام آباد میں گورنروں کی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صدر مملکت کا کہنا تھا کہ ایسے قیدیوں کے ضروری اعداد و شمار جمع کئے جائیں تاکہ اس عمل کو موثر انداز میں شروع اور مکمل کیا جائے۔صدر ڈاکٹر عارف علوی نے تمام صوبائی گورنروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ ان قیدیوں کیلئے ایک فنڈ قائم کریں جنہوں نے ایک لاکھ روپے سے کم جرمانہ ادا کرنا ہے اور اپنی سزا پوری کر چکے ہیں اور اب جرمانے کی عدم ادائیگی کے باعث جیلوں میں کسمپرسی کی زندگی بسر کر رہے ہیں۔

صدر نے گورنروں کو ہدایت کی کہ وہ تمام جیلوں میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی کی بھی ذمہ داری لیں۔ڈاکٹر عارف علوی نے گورنروں سے یہ بھی کہا کہ جیلوں میں قیدیوں اور پولیس اہلکاروں کے ہیپاٹائٹس کے ٹیسٹ کیلئے لیبارٹریاں قائم کی جائیں۔

انہوں نے سندھ کی طرز پر تمام صوبوں میں شہریوں اور پولیس کی رابطہ کمیٹیاں قائم کرنے کی ضرورت پر زور دیا،صدر نے گورنروں پر زور دیا کہ وہ متعلقہ صوبوں میں قائدانہ کردار کرتے ہوئے پانی، آبادی، صحت بنیادی، ثانوی اور اعلیٰ تعلیم کے مسائل حل کریں۔انہوں نے کہا کہ تمام گورنروں کو متعلقہ شعبوں کے ساتھ رابطے کے ذریعے صاف اور سرسبز پاکستان کے مشن کو آگے بڑھانا چاہئے۔صدر نے گورنروں سے اپنی متعلقہ ہائی کورٹس کے چیف جسٹس صاحبان سے قریبی رابطہ رکھنے کیلئے بھی کہا تاکہ ضرورت مندوں کو انصاف کی فوری فراہمی میں عدلیہ کی مدد کی جائے،انہوں نے گورنروں پر زور دیا کہ وہ غلام اسحاق خان انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی سے اپنے صوبے کی کم سے کم ایک یونیورسٹی کے الحاق کیلئے یونیورسٹی کی نشاندہی کریں۔

صدر نے گورنروں کو ہدایت کی کہ وہ تمام صوبوں میں نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے کیمپس قائم کرنے کے لئے اراضی فراہم کریں،صدر نے گورنروں کو یہ ہدایت بھی کی کہ وہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ تمام صوبائی محتسب صاحبان کے دفاتر عوام کی مشکلات کے ازالے کے لئے مزید موثر انداز میں کام کریں۔

خیبرپختونخوا کے گورنر شاہ فرمان نے کانفرنس کو بتایا کہ فاٹا کے انضمام کا95 فیصد عمل مکمل ہوچکا ہے اور باقی5 فیصد کو تیزی سے مکمل کیا جارہا ہے،گلگت بلتستان کے گورنر راجہ جلال حسین مقپون نے صدر سے درخواست کی کہ وہ گلگت بلتستان میں خواتین کی یونیورسٹی قائم کرنے میں تعاون کریں جس پر صدر نے انہیں مکمل تعاون کا یقین دلایا۔

یہ بھی پڑھیے

صدر مملکت عارف علوی سے پاکستان ٹینس فیڈریشن کے صدر سلیم سیف اللہ کی ملاقات

 

صدر مملکت عارف علوی سے سعودی سفیر کی ملاقات، پاک سعودی تعلقات پر گفتگو

Comments are closed.

Scroll To Top