تازہ ترین
میر عبد القدوس بزنجو نئے وزیر اعلیٰ بلوچستان منتخب

میر عبد القدوس بزنجو نئے وزیر اعلیٰ بلوچستان منتخب

کوئٹہ: (13 جنوری 2018) متحدہ اپوزیشن کے امیدوار میر عبد القدوس بزنجو کو نئے وزیراعلیٰ بلوچستان منتخب کرلیا گیا ہے، وزیراعلیٰ کا انتخاب شو آف ہینڈ کے زریعے عمل میں لایا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسپیکر راحیلہ حمید درانی کی زیر صدارت بلوچستان اسمبلی کا اجلاس ہوا، اجلاس نئے قائد کے انتخاب کے لئے طلب کیا گیا تھا۔

ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

نئے وزیراعلیٰ بلوچستان کے لئے متحدہ اپوزیشن کے امیدوارعبدالقدوس بزنجو اور پشتونخواہ میپ کے لیاقت آغا کے درمیان ون آن ون مقابلہ ہوا۔ جس میں متحدہ اپوزیشن کے عبدالقدوس بزنجو نے 41 ووٹ حاصل کرکے کامیابی حاصل کی جبکہ ان کے مقابل پشتونخواہ میپ کے امیدوار13 ووٹ حاصل کرسکے، سابق وزیراعلیٰ بلوچستان ثنااللہ زہری نے اسمبلی اجلاس میں شرکت نہیں کی۔

اسمبلی اجلاس سے قبل پشتون خواہ میپ کے امیدوار سید لیاقت علی کے حق میں دستبردار ہوئے تھے جس کی تحریری درخواست انہوں نے سیکریٹری اسمبلی کو جمع کرائی تھی۔

نئے وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو کا سیاسی سفر

عبدالقدوس بزنجو کا تعلق بلوچستان کے پسماندہ ترین اور شورش زدہ ضلع آواران سے ہے، قدوس بزنجو 1974 میں پیدا ہوئے

میر عبد القدوس بزنجو نے ابتدائی تعلیم آواران سے حاصل کی جبکہ جامعہ بلوچستان سے انگریزی میں ماسڑز کیا اور پھر زمانہ طالب علمی ہی میں باقاعدہ سیاست کا اغاز کیا۔

دو ہزار دو میں پہلی بار عبد القدوس بزنجو پی پی 41 آواران سے رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے اور 2002 سے 2007 تک وزیر لائیو اسٹاک کے وزیر رہے۔دوہزار تیرہ کے عام انتخابات میں ضلع آواران کے حلقے پی بی 41 سے ایک بار پھر رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے ، عام انتخابات میں کالعدم تنظیموں کی دھمکیوں کے باعث انہیں صرف 544 ووٹ پڑے جو ملکی تاریخ میں کسی بھی صوبائی اسمبلی کے انتخابات میں کامیاب امیدوار کے لیے کم ترین ووٹ تھے۔

قدوس بزنجو نے 2013 سے 2015 تک بلوچستان اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر کے فرائض انجام دئیے۔

یہ بھی پڑھیے

بلوچستان اسمبلی: پشتون خواہ کے امیدوار لیاقت آغا کے حق میں دستبردار

وزیراعلیٰ بلوچستان کے استعفے کی اندرونی کہانی سامنے آگئی

 

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top