تازہ ترین
تخت لاہور کے لئے پی ٹی آئی اور نون لیگ نے اپنے امیدوار میدان میں اتاردیئے

تخت لاہور کے لئے پی ٹی آئی اور نون لیگ نے اپنے امیدوار میدان میں اتاردیئے

ویب ڈیسک: (08 جون، 2018)سیاسی جماعتوں کی جانب سے پچیس جولائی کو ہونے والے عام انتخابات کی تیاریاں زور وشور سے کی جارہی ہیں، جبکہ تخت لاہور کو فتح کرنے کے لئے سابق حکمران جماعت نون لیگ اور پی ٹی آئی نے اپنے اپنے امیدواروں کو میدان میں اتار دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق تخت لاہور کے لئے سب سے بڑا مقابلہ این اے ایک سو اکتالیس میں ہوگا، جس میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور سابق وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کے درمیان انتخابی دنگل ہوگا۔

این اے ایک سو انتیس میں سابق اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق اور عبدالعلیم خان آمنے سامنے ہوں گے، جبکہ این اے ایک سو چونتیس میں پی ٹی آئی کے ظہیر عباس کھوکھر، شہباز شریف کے مدمقابل ہوں گے، سابق وزیراعلیٰ پنجاب اسکے علاوہ ڈیرہ غازی خان کے حلقے این اے ایک سو بانوے سے بھی قسمت آزمائی کرینگے۔

ابقہ حلقے این اے ایک سو بیس جو کہ نئی حلقہ بندیوں کے باعث ایک سو پچیس بنا ہے،مذکورہ نشست نواز شریف کی آبائی نشست کہلائی جاتی ہے، اس سیٹ پر پی ٹی آئی کی ڈاکٹر یاسمین راشد اور سابق وزیراعظم کی صاحبزادی مریم نواز کے درمیان گھمسان کا رن پڑنے کا امکان ہے، کیونکہ بیگم کلثوم نواز کی علالت کے باوجود اس حلقے سے کامیاب ہوئیں تھی، اس کے علاوہ مریم نواز خود اس حلقے میں ہونے والے ترقیاتی کاموں کی نگرانی کرتی رہی ہیں۔

این اے ایک سو چوبیس میں لیگی رہنما حمزہ شہباز تحریک انصاف کے ولید اقبال کا مقابلہ کریں گے، شاہدرہ کے حلقہ این اے ایک سو تئیس میں (ن )لیگ کے ملک ریاض اور پی ٹی آئی کے مہر واجد عظیم آمنے سامنےہوںگے جبکہ نون لیگ کے پرویز ملک اور پی ٹی آئی کے جمشید اقبال چیمہ این اے ایک سو ستائیس میں قسمت آزمائی کریں گے۔

این اے ایک سو اٹھائیس سے (ن) لیگ کے شیخ روحیل اصغر کا مقابلہ پی ٹی آئی کے اعجاز ڈیال کریں گے، این اے ایک سو تیس پر پی ٹی آئی کے شفقت محمود کا مقابلہ (ن) لیگ کے خواجہ احمد حسان سے ہوگا، این اے ایک سو تینتیس سے نون لیگ کے زعیم قادری اور پی ٹی آئی کے اعجاز چوہدری مدمقابل ہوں گے۔نون لیگ کے سیف الملوک کھوکھر اور پی ٹی آئی کے کرامت کھوکھر این اے ایک سو پیتیس میں ایک دوسرے سے ٹکرائیں گے، این اے ایک سو چھتیس پر افضل کھوکھر نون لیگ کی جانب سے، خالد گجر پی ٹی آئی کی جانب سے قسمت آزمائی کریں گے۔

ویڈیو دیکھنے کے لیے پلے کا بٹن دبائیے

دوسری جانب آج سابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے دادو کے حلقے سے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرائے مراد علی شاہ آج صوبائی اسمبلی کی نشست پی ایس اسی دادو سے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے لئے پہنچے،اس موقع پر آر او آفس پر کارکنان نے ان کے حق میں نعرے بازی کی، بعد ازاں سابق وزیراعلیٰ نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے، اس موقع پر سابق ایم پی اے سید آصف علی شاہ بھی موجود تھے۔واضح رہے کہ مذکورہ حلقے سے مراد علی شاہ سال دوہزار تیرہ کے عام انتخابات میں بلامقابلہ منتخب ہوئے تھے۔

 گذشتہ روز پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹوزرداری نے کراچی کے حلقے این اے 246 سے کاغذات نامزدگی جمع کرائے تھے۔سٹی کورٹ میں ریٹرننگ افسرکے پاس کاغذات جمع کرانے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹوزرداری نے کہا کہ میرے لیے آج خوشی کا لمحہ ہے اور پاکستان کی عوام کی خدمت ہمارے لیے خوشی کی باعث ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ محترمہ بینظیر بھٹو شہید کے مشن کو آگے لے کر چلوں گا۔پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفی کمال نے قومی اسمبلی کے حلقے 247 جنوبی اور این اے 253 وسطی اس کے علاوہ صوبائی اسمبلی کی نشست پی ایس 127 اور پی ایس 124 سے بھی کاغذات نامزدگی جمع کرائے۔

واضح رہے کہ عام انتخابات دوہزار اٹھارہ کے لئے پولنگ پچیس جولائی کو ہوگی۔

یہ بھی پڑھیے

الیکشن کمیشن نے انتخابی شیڈول میں ایک بار پھرتبدیلی کردی

سابق وزیراعلیٰ سندھ نے کاغذات نامزدگی جمع کرادئیے

 

 

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top