تازہ ترین
وزیراعظم کی ایک بار پھر بھارت کو مذاکرات کی دعوت

وزیراعظم کی ایک بار پھر بھارت کو مذاکرات کی دعوت

اسلام آباد:(27 فروری 2019) وزیراعظم عمران خان نے واضح کیا ہے کہ جنگ کسی کے حق میں نہیں ہوگی،بھارت پاکستان کے ساتھ بیٹھے اور مسائل کو بات چیت سے حل کرے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے قوم سے مختصرخطاب کرتے ہوئے کہا کہ چاہتا تھا موجودہ حالات پر قوم کو اعتماد میں لوں، ہم نے پلوامہ واقعے کے بعد بھارت کو تحقیقات کی پیشکش کی،اور کہا کہ اگر شواہد فراہم کرے تو ہم تعاون کیلئے تیار ہیں۔

مجھے پتہ ہے کہ پلوامہ حملے میں ہلاک ہونے والوں کے اہل خانہ کو کس قسم کی تکلیف سے گزرنا پڑا ہوگا،اس لیے ہم نے بھارت کو آفر دی، انہوں نے کہا پاکستان نہیں چاہتا کہ اس کی سر زمین دہشتگردی کیلئے استعمال ہو، ہم نے انتظار کیا اور آج ایکشن لیا، تعاون کیلئے تیار تھے تو بھی خدشہ تھا کہ بھارت کوئی کارروائی کریگا۔

وزیراعظم عمران خان نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ہم نے فوری طور پر گزشتہ صبح ایکشن اس لیے نہیں لیا کیونکہ ہمیں پوری طرح پتا نہیں تھا کہ کس طرح کا نقصان ہواہے اور اگر پتا نہ چلتا اور ایکشن لے لیتے تو اس کی وجہ سے جانی نقصان ہوتا جبکہ ہمارا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ۔

وزیراعظم کا کہناتھا کہ ہماری ترجیح تھی کہ کوئی جانی نقصان نہ ہو اور مقصد آپ کو یہ بتانا تھا کہ اگر آپ ہمارے ملک میں آ سکتے ہیں تو ہم بھی آپ کے ملک میں جا سکتے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے ایک بار پھر بھارت کو مذاکرات کی پیشکش کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نہیں چاہتا کہ اس کی سرزمین دہشت گردی کے خلاف استعمال ہو، دونوں ممالک کو مل بیٹھ کر مسائل کو حل کرنا چاہیے، کیوں کہ جب جنگ شروع ہوگی تو نہ میرے کنٹرول میں رہے گی اور نہ مودی کے، اور جنگ دونوں ملکوں کے مفاد میں بھی نہیں، دنیا میں جتنی بھی جنگیں ہوئیں سب بغیرسوچے سمجھے شروع کی گئیں، پہلی جنگ عظیم کو مہینوں میں ختم ہونا تھا لیکن 6 سال لگ گئے۔

Comments are closed.

Scroll To Top