تازہ ترین
وزیراعظم کا ریلوے کی زمینوں کو قبضہ مافیا سے آزاد کرانے کا اعلان

وزیراعظم کا ریلوے کی زمینوں کو قبضہ مافیا سے آزاد کرانے کا اعلان

اسلام آباد:(14ستمبر 2018) وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان ریلوے کے پاس اتنی زمین ہے کہ اسے کمرشلائز کرکے ہم اپنا قرضہ اتار سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق راولپنڈی میانوالی ٹرین کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ ملک میں مہنگائی کی گئی، اسپتال میں غریب علاج کے لیے ترس گئے، ریلوے غریبوں کی سواری ہے۔ انگریز گیارہ ہزار کلو میٹر ریل ٹریک چھوڑ کر گئے تھے۔ ہمارے حکمرانوں نے اب تک صرف چھ سو کلو میٹر ٹریک تک محدود کردیا ہے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ انگریزوں سے آزادی حاصل کرلی لیکن مائنڈ سیٹ کو نہیں چھوڑا، حکمرانوں نے صرف اپنا اور خاندان کے بارے میں سوچا،انہوں نے کہا کہ یہ پہلی حکومت ہوگی جو نیچے سے لوگوں کو اوپر اٹھائے گی۔

ریلوے کی سرگرمیوں میں واضح اضافہ نظر آرہا ہے۔ ساری سہولتیں امیروں کے لیے ہوتی ہیں لیکن اب ایسا نہیں ہوگا۔ حکومت عام آدمی کی بہتری کے لیے ہر قدم اٹھا رہی ہے۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ کراچی سے پشاور تک ایم ایل ون کی تعمیر پر خوشی ہے، ضعیف افراد کے لیے سفری سہولت سے بھی متاثر ہوا ہے، ہم اپنے بچوں کا مستقبل اپنے ہاتھوں سے تباہ کر رہے ہیں۔

اس سے قبل وزیراعظم عمران خان راولپنڈی ایکسپریس اور میانوالی ریل کار کا افتتاح کیا، راولپنڈی ایکسپریس آج رات آٹھ بجے لاہور اور راولپنڈی سے ایک ہی وقت میں روانہ ہوگی، ٹرین میں چھ سو پچاسی مسافروں کی گنجائش ہے۔

دونوں نئی ٹرینوں پر پہلے روز مسافروں کو کرایوں پر پچاس فیصد رعایت فراہم کی جارہی ہے اس کے علاوہ ٹرینوں کی گھر سے بکنگ کرانے کےلئے آن لائن بکنگ کی سہولت بھی دستیاب ہے۔گذشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے پاکستان ریلوے سے متعلق ایک اجلاس کی صدارت کی،جس میں انہوں نے پاکستان ریلوے کو ہدایت کی تھی کہ پندرہ دن کے اندر اپنی آمدنی بڑھانے کی غرض سے انسداد تجاوزات کی مہم شروع کرنے اور ریلوے کی اراضی کو مستقبل میں استعمال کرنے کیلئے ایک جامع منصوبہ پیش کرے۔اجلاس میں سیکرٹری ریلوے محمد جاوید انور نے وزیراعظم کو پاکستان ریلوے اور اسے ایک پائیدار اور منافع بخش ادارہ بنانے کیلئے مختلف اقدامات کے بارے میں تفصیل سے آگاہ کیا،انہوں نے وزیراعظم کو پاکستان ریلوے کی اربوں روپے مالیت کی ہزاروں ایکٹر اراضی پر تجاوزات کے مسئلے کے بارے میں بھی بتایا،وزیرریلوے شیخ رشید احمد اور وزارت کے دیگر سینئر عہدیدار بھی بریفنگ میں موجود تھے۔

اس سے قبل گذشتہ روز راولپنڈی اسٹیشن کے دورے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ آج وفاقی کابینہ کے اجلاس میں ریلوے سے متعلق وزیر اعظم عمران خان کے سامنے اپنی سفارشات پیش کرونگا، اور محکمہ ریلوے کی زمین واگزار کرانے کے لیے آرڈیننس جاری کرنے کی تجویز دوں گا، اوروزیر اعظم سے درخواست کرونگا کہ وہ تمام ٹرینوں کو اپ گریڈ کریں۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ گوادر سے کوئٹہ تک ٹریک ڈالا جائے گا ، جس کے لئے ایف ڈبلیو او سے بات ہو گئی ہے،انہوں نے سی پیک کو پاکستان کی ریڑھ کی ہڈی قرار دیتے ہوئے کہا کہ ریلوے کا محکمہ چالیس سے بیالس ارب روپے کے خسارے میں ہے جبکہ ہمارے پاس وسائل نہیں پھر بھی کام کریں گے۔

میڈیا سے گفتگو میں وزیر ریلوے کا کہنا تھا کہ تیس دسمبر تک پاکستان ریلوے کو مثالی ریلوے بنانا ہمارا ہدف ہے،ہم ریلوے کی آمدن بڑھانے جا رہے ہیں، جلد سارے پسماندہ علاقوں میں پاکستان ریلوے پہنچے گی۔شیخ رشید کا کہنا تھا کہ محکمہ ریلوے زیرو ٹالرنس کرپشن کی پالیسی پر گامزن ہیں، کسی صورت کرپشن پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا،ایک دو مچھلیاں سارے تالاب کو گندہ کرتی ہیں،ضروری نہیں کہ سارا محکمہ ہی خراب ہو،میں میں وعدہ کرتا ہوں کہ بھیس بدل کر بھی ریل گاڑیوں کو چیک کرو گا۔اس سے قبل پاکستان ریلوے نے وزیراعظم عمران خان کے آبائی علاقہ کے لئے میانوالی ریل کار کے لئے کوچز تیار کی، ان کوچز کو ریکارڈ مدت میں کیرج فیکٹری اسلام آبا د میں تیارکیا گیا ہے اور ایک کوچ کی تیاری پر تقریباً 85 لاکھ روپے لاگت آئی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

شیخ رشید کا میانوالی کیلئے ٹرین چلانے کا اعلان

شیخ رشید کا ساٹھ دنوں میں ریلوے میں تبدیلی لانے کا اعلان

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top