تازہ ترین
وزیراعظم کی تقریر پریس کانفرنس نہیں تھی، مریم اورنگزیب کی وضاحت

وزیراعظم کی تقریر پریس کانفرنس نہیں تھی، مریم اورنگزیب کی وضاحت

اسلام آباد: (18 مئی 2018) وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیراعظم کی تقریر پریس کانفرنس نہیں صحافیوں سے گفتگو تھی جو براہ راست نشرنہیں ہوسکتی تھی،ذرائع سے خبریں چلانے والے مجھ سے پوچھ لیتے تو اصل ماجرہ بتادیتی۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے باہر ایک صحافی نے سوال کیا کہ وزیر اعظم کی تقریر کی فوٹیج ڈیلیٹ کردی گئی ہے اس پر آپ کیا کہیں گی ؟،صحافی کے اس سوال پر وزیر مملکت برائے اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے کہا کہ فوٹیج پی ٹی وی سے ڈیلیٹ ہوتی یا رکوائی جاتی تووہ خود اس پربیان دیتیں۔

ویڈیو دیکھنے کے لیے پلے کا بٹن دبائیے

مذکورہ گفتگو وزیراعظم ہاﺅس بلائے گئے صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو تھی وہ پریس کانفرنس نہیں بلکہ پریس ٹاک تھی جو براہ راست نشر ہونی تھی اور نہ ہی کیمرہ کی اجازت تھی، پریس ٹاک لائیو دکھانے کیلئے کبھی بھی نہیں تھی۔انہوں نے مزید کہا کہ میڈیا میں ذرائع سے خبریں چل رہی ہیں یہ خبر بھی تین روز تک چلتی رہی ، اگر میڈیامجھ سے پوچھ لیتاتووضاحت کردیتی۔

خیال رہے کہ کچھ روز پہلے قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ہوا تھا جس میں نواز شریف کے ممبئی حملوں کے بارے میں بیان کی مذمت کی گئی تھی ۔

اجلاس کے بعد وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے میڈیا سے گفتگو کی جس میں قومی سلامتی کمیٹی کے اعلامیے کو مسترد کرکے نواز شریف کی قیادت پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا گیا۔ وزیر اعظم کی اس تقریر یا پریس ٹاک کے بارے میں خبریں چل رہی ہیں کہ یہ ڈیلیٹ کردی گئی ہے جبکہ پی ٹی وی سے اس کی فوٹیج چوری کرلی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھئے

قومی اسمبلی اجلاس: بجٹ منظوری کے دوران کورم ٹوٹ گیا

نواز شریف کے بیان کے حوالے سے تفصیلات معلوم نہیں، ایاز صادق

Comments are closed.

Scroll To Top