تازہ ترین
پاناما نظرثانی کیس : سابق وزیراعظم کے وکیل آج اپنے دلائل مکمل کریں گے

پاناما نظرثانی کیس : سابق وزیراعظم کے وکیل آج اپنے دلائل مکمل کریں گے

اسلام آباد: (14 ستمبر 2017) سپریم کورٹ میں پاناما نظر ثانی کیس کی سماعت آج پھر ہوگئی، جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 5 رکنی لارجر بینچ درخواستوں کی سماعت کرے گا ،آج سابق وزیراعظم کے وکیل خواجہ حارث اپنے دلائل مکمل کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق پاناما کیس کے فیصلے پر نظرثانی کیلئے نواز شریف اور ان کے بچوں کی جانب سے دائر کی درخواستوں پر سماعت آج سپریم کورٹ میں ہوگی، جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 5رکنی بینچ سماعت کرے گا۔لارجر بینچ میں جسٹس گلزاراحمد اور جسٹس اعجاز افضل خان ، جسٹس عظمت سعید اور جسٹس اعجاز الاحسن شامل ہیں۔

گزشتہ روز سماعت کے موقع پر سپریم کورٹ کا کہنا تھا کہ پاناماکا فیصلہ بہت محتاط ہو کر دیاہے، اور اس بات کا خیال رکھا گیا کہ کوئی دوسرا ٹرائل متاثر نہ ہو۔

جسٹس اعجازالاحسن نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا تھا کہ عدالتی فیصلے میں بہت محتاط زبان استعمال کی گئی، ہم نے آئس برگ کی ٹپس سے نتیجہ اخذ کیا ہے، یہ نہ ہومکمل آئس برگ نکال لیں اور آپ شکایت کریں۔ خواجہ حارث نے اپنے دلائل میں کہا تنخواہ ظاہر نہ کرنا غلطی ہوسکتی ہے، بد نیتی نہیں۔جسٹس عظمت سعید کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس ٹریبونل کے فیصلے کیخلاف اپیل نہیں تھی، ہم نے 184/3 کا اختیار استعمال کیا، کیپٹل ایف زیڈای کا معاملہ نیب کے پاس ہے، مزید کچھ نہیں کہنا چاہتے۔

خیال رہے کہ سپریم کورٹ نے 28 جولائی کو پاناما کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے سابق وزیراعظم نواز شریف کو نااہل قرار دیتے ہوئے نیب کو نواز شریف، ان کے بچوں اور اسحاق ڈار کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کے احکامات جاری کئے تھے۔

یہ بھی پڑھئے

نگران جج کی تعیناتی سےشفاف ٹرائل کیسے ہو گا؟؟ وکیل سابق وزیراعظم

پانامانظر ثانی کیس: سپریم کورٹ میں درخواستوں پر سماعت شروع

 

Comments are closed.

Scroll To Top