تازہ ترین
سہہ فریقی اجلاس: فریقین کا خطے سے داعش کے خاتمے  کے عزم کا اظہار،آئی ایس پی آر

سہہ فریقی اجلاس: فریقین کا خطے سے داعش کے خاتمے کے عزم کا اظہار،آئی ایس پی آر

کابل: (14 ستمبر 2017) خطے سے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پاکستان ،امریکہ اور افغانستان کے درمیان سہ فریقی مذاکرات ہوئے جس میں تینوں فریقین نے داعش کے خاتمے کے لیے کوششیں جاری رکھنے پر اتفاق کیا ہے ۔

ویڈیودیکھنے کےلیے پلے کابٹن دبائیں 

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ(آئی ایس پی آر) کے مطابق افغانستان کے دارلحکومت کابل میں پاکستان، امریکا اور افغانستان کے سہہ فریقی مذاکرات ہوئے، جس میں 6 رکنی پاکستانی وفد کی قیادت ڈی جی ملٹری آپریشن میجر جنرل ساحر شمشاد مرزا نے کی۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ افغان دارالحکومت کابل میں سہ فریقی مذاکرات ہوئے جس میں پاکستان ،امریکہ اور کابل کے نمائندوں نے شرکت کی ۔مذاکرات میں پاکستان کے 6رکنی وفد نے شرکت کی جس کی قیادت ڈی جی ایم او میجر جنرل ساحر شمشاد مرزا نے کی ۔سہ فریقی مذاکرات میں باہمی مفادات اور تحفظات سمیت سیکیورٹی امور اور مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ، اس دوران تینوں فریقین نے اتفاق کیا کہ دہشت گردی اور داعش کے خاتمے کے لیے کوششیں جاری رکھی جائیں گی۔

مذاکرات کے دوران داعش کے خاتمے کے لیے پاک افغان فوجی تعاون پر تفصیلی گفتگو ہوئی اور اس بات پر زور دیا گیا کہ داعش کا خاتمہ مزید تعاون سے ہی ممکن ہے ۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق پاکستان اور افغانستان کے درمیان دو طرفہ اجلاس بھی ہوا جس میں سرحد پار فائرنگ، انسداد دہشت گردی اور دونوں ممالک کا اپنے اپنے علاقوں میں آپریشن اور قیدیوں کے تبادلے پر غور بھی کیا گیا۔

 

 

Comments are closed.

Scroll To Top