تازہ ترین
پرانے ریفرنس میں نیا خول چڑھا کر پیش کیا جارہا ہے، نواز شریف

پرانے ریفرنس میں نیا خول چڑھا کر پیش کیا جارہا ہے، نواز شریف

اسلام آباد: (20 مارچ 2018) سابق وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ جب پرانے ریفرنس میں کچھ نہیں نکلا تو اسی ریفرنس پر خول چڑھادیا گیا ہے، بتایا جائے کہ عدالت سرکاری خزانے کو نقصان پہنچانے والے کیس کیوں نہیں سن رہی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے قائد مسلم لیگ (ن) نے کہا کہ ہمارے کیس میں کچھ نہ ہونے کے باوجود بھی کچھ نکالا جا رہا ہے،جب پرانے ریفرنس میں کچھ نہیں نکلا تو نئے ریفرنس کیوں دائر کیے ، یہ بالکل اسی طرح ہے جیسے دلیپ کمار کی فلم ہوں۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

نواز شریف کا کہنا ہے کہ اگر حساب لینا ہے تو انیس سو سینتیس سے لیں ، کیونکہ اللہ تعالیٰ نے انیس سو سینتیس سے نوازنہ شروع کیا تھا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

قائد مسلم لیگ نے کہا کہ رینٹل پاور ، کوٹیکنا ،این آئی سی ایل جیسے کیسز میں کرپشن ثابت ہوئی ہے جبکہ ای او بی آئی میں خرد برد ثابت ہوئی مگر اس کے باوجود سرکاری خزانے کو نقصان پہنچانے والے کیس نہیں سنے جارہے ہیں، اس کی وجہ بتائی جائے۔اس موقع پر صحافی نے نواز شریف سے سوال کیا کہ گزشتہ روز عامر لیاقت پی ٹی آئی میں شامل ہوئے اس پر آپ کا کیا کہنا ہے، جواب میں سابق وزیراعظم نے کہا کہ پی ٹی آئی بنی ہی عامر لیاقت جیسے لوگوں کے لئے ہے، اس پارٹی میں عامر لیاقت جیسے لوگ ہی سجتے ہیں۔

غیر رسمی گفتگو کے دوران صحافی نے کہا کہ چوہدری نثار نے رات پروگرام میں شکوے کئے ہیں آپ بلا کر انہیں کیوں نہیں مناتے، جس پر نواز شریف خاموش ہوگئے اور اس بات کا جواب دینے سے گریز کیا۔مشرف کی جانب سے سیکیورٹی مانگے جانے کے سوال پر نواز شریف نے طنزیہ مسکراہٹ میں کہا کہ اب ان پر صرف ہنسی ہی آتی ہے۔

اس موقع پر مریم نواز نے بھی مختصر گفتگو کی، میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے رہنما مسلم لیگ (ن) نے کہا کہ آپ نے کرپشن کا الزام لگایا ہے کرپشن ثابت کریں، مگر عمران خان نے تسلیم کیا کہ آف شور کمپنی میری ہے تو اسے صادق امین کا سرٹیفکٹ دے دیا گیا ہے۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ نام نہاد ریفرنس کے پہلے چھ ماہ میں کیا ثابت ہوا جو اب نئی چیزیں مل گئی ہیں، ایسا کیا مل گیا ہے جو ڈیڑھ ماہ ہوجائے گا۔

مشرف کی سیکیورٹی سے متعلق مریم نواز کا کہنا تھا کہ جو ملک کا ستیاناس کر کے جائے وہ اب سیکیورٹی مانگتا ہے۔دوسری جانب احتساب عدالت میں ایون فیلڈ ضمنی ریفرنس کی سماعت شروع ہوگئی ہے ، جہاں کچھ دیر بعد جے آئی ٹی کے سربراہ اپنا بیان ریکارڈ کرائیں گے۔

یہ بھی پڑھیے

زائد اثاثہ جات کیس: صدر نیشنل بینک کی جانب سے ریفرنس خارج کرنے کی درخواست مسترد

سینیٹ الیکشن لڑنے پر اسحاق ڈار آئندہ ہفتے سپریم کورٹ طلب

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top