تازہ ترین
پاکستان میں آج دستور کا قومی دن منایا جارہا ہے

پاکستان میں آج دستور کا قومی دن منایا جارہا ہے

ویب ڈیسک (10 اپریل 2018) پاکستان میں آج دستور کا قومی دن منایا جارہا ہے۔ پاکستان کا موجودہ دستور تہتر کا آئین کہلاتا ہے۔

پاکستان کے موجودہ آئین کو 2 بار معطل کرکے قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیاں معطل کردی گئی تھیں۔ جس کے نتیجے میں آئین و جمہوریت کی بحالی کے لئے ملک گیر جدوجہد ہوئی جس کے نتیجے میں ایک بار پھر آئین بحال ہوا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

مشرقی پاکستان الگ ہونے کے بعد 1972 میں 1970 کے انتخابات کی بنیاد پر بنائی گئی اسمبلی نے ملک کے متفقہ آئین کے لئے کام شروع کیا۔Image result for Jamaat e islami against gen zia ul haqقومی اسمبلی نے ایک آئین ساز کمیٹی بنائی جس نے 8 ماہ کی مسلسل مشاورت اور کوششوں کے بعد آئینی دستاویز کو ایک شکل دی۔ 10 اپریل 1973 کو اس کمیٹی نے آئینی مسودہ قومی اسمبلی میں پیش کیا جسے منظور کرلیا گیا اور 14 اگست 1973 کو ملک بھر میں نافذ کردیا گیا۔

اس آئین کا سارا کریڈٹ اس وقت کی سیاسی جماعتوں کو جاتا ہے۔ 1973 کے آئین کے مطابق ملک میں پارلیمانی نظام حکومت ہوگا جس کا سربراہ وزیراعظم ہوگا۔

اسلام پاکستان کا سرکاری مذہب ہوگا جبکہ صدر اور وزیراعظم کا مسلمان ہونا لازمی قرار دیا گیا۔ موجودہ آئین کی منظوری کے 4 سال بعد ہی جنرل ضیاالحق نے ایک فوجی بغاوت کرکے آئین معطل کردیا۔Image result for zia ul haqآئین کی بحالی کے لئے ملک بھر میں ایم آر ڈی تحریک چلی۔ سیکڑوں سیاسی کارکنان کو کوڑے مارے گئے اور ہزاروں لوگ پابند سلاسل ہوئے۔

اسی طرح بارہ اکتوبر 1999 کو جنرل پرویز مشرف نے ایک بار پھر فوجی بغاوت کے ذریعے آئین معطل کرکے منتخب ادارے ختم کردیئے۔Image result for gen musharrafموجودہ پارلیمنٹ نے 10 اپریل کو یوم دستور منانے کا اعلان کیا اور گذشتہ کچھ برسوں سے اسی تاریخ کو ملک کے آئین کی بالادستی کے لئے دونوں ایوانوں میں نہ صرف آئین کی بالادستی کو زیر بحث لایا جاتا ہے بلکہ آئین کی پاسداری کا عزم بھی کیا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

پاکستانی سائنسدان نے بائیونک چپ ایجاد کرلی

قائد اعظم یونیورسٹی میں “پیغام پاکستان کانفرنس” کا انعقاد

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top