تازہ ترین
نعیم الحق وزیراعظم کے سیاسی امور، افتخاردرانی میڈیا کیلئے معاون خصوصی مقرر

نعیم الحق وزیراعظم کے سیاسی امور، افتخاردرانی میڈیا کیلئے معاون خصوصی مقرر

اسلام آباد: ( 21 اگست 2018) وزیر اعظم عمران خان نے نعیم الحق کو اپنا سیاسی امور کا معاون خصوصی مقرر کر دیا جبکہ افتخار درانی کو میڈیا کے لئے معاون خصوصی مقرر کر دیا گیا ان دونوں کا عہدہ وزیر مملکت کے برابر ہو گا۔

کابینہ ڈویژن کے ایک نوٹیفیکیشن کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے نعیم الحق کو اپنا سیاسی امور کا مشیر مقرر کر دیا ہے۔ ان کا عہدہ وزیر مملکت کے برابر ہو گا۔ اسکے علاوہ افتخار درانی کو میڈیا کے لئے معاون خصوصی مشیر مقرر کر دیا گیا ہے۔ ان کا بھی عہدہ وزیر مملکت کے مساوی سمجھا جائے گا۔

اس موقع پر نعیم الحق نے ٹوئٹر پیغام میں عمران خان کا شکریہ ادا کیا،یاد رہے کہ نعیم الحق تحریک انصاف کے کلیدی عہدوں پر رہے ہیں اور پارٹی کے ترجمان کا فرائض بھی انجام دیتے رہے ہیں،اس کے علاوہ افتخار درانی کو وزیراعظم کا معاون خصوصی برائے میڈیا مقرر کیا گیا ہے،افتخار درانی اس سے پہلے تحریک انصاف سینٹرل میڈیا ڈیپارٹمنٹ کے انچارج تھےجبکہ وہ قائد اعظم اور نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں پڑھاتے بھی رہے ہیں، نعیم الحق اور افتخار درانی کی شمولیت کے بعد وزیرعظم کی کابینہ میں 15 وزراء، 5 مشیر اور 2 معاونین خصوصی ہوگئے ہیں۔

 

 

گذشتہ روز وزیراعظم کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں عمران خان نے تمام وزرا کو ٹاسک دے دیئے۔ عمران خان کا کہنا تھا وزراء اپنی اپنی وزراتوں میں گڈ گورننس اور میرٹ کا نظام اپنائیں، عوام نے مینڈیٹ دیا ہے، اس پر پورا اترنا ہے، کرپٹ اور نااہل افراد کسی صورت قابل قبول نہیں، تمام وزارتوں کی خود بھی نگرانی کروں گا۔

وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ یہ دو چھٹیاں بھی سرکاری نہ ہوتیں تو آپکو ہر گز چھٹی نہ ملتی،اب ہفتے میں دو مرتبہ کابینہ کا اجلاس ہوگاجبکہ میں سولہ گھنٹے روزانہ کی بنیاد پر کام کروں گا اور وزرا اور مشیروں کو بھی چودہ گھنٹے کام کرنا ہوگا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

وفاقی کابینہ کے پہلے اجلاس میں لوٹی دولت واپس لانے کیلئے ٹاسک فورس قائم کر دی گئی،وزیراعظم کے معاون خصوصی بیرسٹر شہزاد اکبر کو ٹاسک فورس کا کنونیئر مقرر کیا گیا، بیرون ممالک سے رقوم واپسی کیلئے ٹاسک فورم کو دو ہفتوں میں لائحہ عمل طے کرنے کی ہدایت کی گئی ہے، ٹاسک فورس دو ہفتوں میں تمام وزارتوں سے منی لانڈرنگ کے کیسز کی تفصیلات اکٹھی کرے گی، ٹاسک فورس دیگر ممالک سے رقوم واپس لانے کیلئے معاہدوں کا بھی جائزہ لے گی۔

اس سے قبل وزیراعظم عمران خان کی سولہ رکنی ٹیم نے حلف اٹھایا تھا، اسد عمر خزانے کے وزیر، شاہ محمود وزیرخارجہ اور فواد چوہدری وزیراطلاعات ، شیخ رشید ریلوے، فروغ نسیم قانون اور پرویز خٹک نے دفاع کی کمان سنبھالی۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

چوہدری طارق بشیر چیمہ کو وزیر سیفران، نورالحق قادری وزیر مذہبی امور، شیریں مزاری وزیر انسانی حقوق، غلام سرور خان وزیر پٹرولیم اور زبیدہ جلال وزیر دفاعی پیداوار کے امور سرانجام دیں گی۔

یہ بھی پڑھیے

افغان صدرنے عمران خان کو انتخابی جیت پر مبارکباد دی، نعیم الحق

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top