تازہ ترین
کورم ٹوٹنے پر قومی اسمبلی کا اجلاس کل تک ملتوی

کورم ٹوٹنے پر قومی اسمبلی کا اجلاس کل تک ملتوی

اسلام آباد: (13 ستمبر 2017)قومی اسمبلی کے اجلاس میں معلومات تک رسائی کے بل پر بات کرنے کا موقع نہ دینے پر اپوزیشن نے واک آوٹ کیا ، جبکہ کورم پورا نہ ہونے پر اسپیکر نے اجلاس کل تک کے لئے ملتوی کردیا۔

تفصیلات کے مطابق صبح اسپیکر کی جانب سے وزیر دفاع ، سیکریٹری دفاع اور انسانی حقوق کے سیکریٹری کی عدم حاضری پر ایوان کی کارروائی احتجاجا پندرہ منٹ کے لئے ملتوی کردی گئی تھی، بعد ازاں اجلاس دوبارہ شروع ہوا تو اپوزیشن کی جانب لوڈشیڈنگ سے متعلق سوالات کئے گئے، اس موقع پر وزارت توانائی کی جانب سے جواب دیا گیا کہ سندھ میں چار گھنٹے لوڈشیڈنگ ہوتی ہے، جس پر اپوزیشن بالخصوص پاکستان پیپلز پارٹی نے بھرپور احتجاج کیا ، پیپلز پارٹی کی شازیه مری کا کہنا تھا کہ بجلی پر نو قسم کے ٹیکسز عائد ہیں جبکه ٹرانسفارمر بھی عوام کے پیسوں سے ہی بنتے ہیں۔وزیر برائے پارلیمانی امور شیخ آفتاب نے سروس ٹربیونل ایکٹ 1973 میں مزید ترمیم کا بل جبکہ وزیر برائے انسانی حقوق نے قومی کمیشن برائے حقوق اطفال کا بل پیش کیا، تحریک انصاف کی شیریں مزاری اور پیپلز پارٹی کی نفیسہ شاہ نے بل کی مخالفت کی۔ بچوں کے حقوق کے قومی کمیشن بل کی مخالفت پر وزیر قانون زاہد حامد برہم ہوئے ، ان کا کہنا تھا کہ پہلے قومی اسمبلی اور سینیٹ نے ترامیم کے ساتھ پاس کیاتھا، اب اپوزیشن اس بل کی مخالفت کرکے دنیا کو کیا پیغام دینا چاہتی ہے، بعد ازاں اپوزیشن کی مخالفت کے باوجود قومی اسمبلی نے قومی کمیشن برائے حقوق اطفال بل 2017 کثرت رائے سے منظور کرلیا۔

بعد ازاں وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے معلومات تک رسائی کے حق کےقانون سے مشروط منظوری کے لئے پیش کیا، اس موقع پر اپوزیشن کو بل پر بات کرنے کا موقع نہیں دیا گیا، جس پر اپوزیشن ارکان نے واک آؤٹ کیا،پی پی پی کے رکن نوید قمر کا کہنا تھا کہ جب آپ نے من مانی کرنے ہے تو ہمارے بیٹھنے کا کوئی فائدہ نہیں ہے، اپوزیشن کے واک آؤٹ کے بعد کورم ٹوٹنے پر اجلاس کل صبح ساڑھے دس بجے تک ملتوی کردیا گیا۔

اس سے قبل حکومتی ارکان اور وفاقی وزرا کی ایوان میں عدم موجودگی پر ایاز صادق نے وزیر دفاع ، سیکریٹری دفاع اور انسانی حقوق کے سیکریٹری کو پندرہ منٹ کے اندر ایوان میں آنے کی ہدایت کی، تاہم مقررہ وقت گزرنے کے بعد بھی متعلقہ حکام ایوان میں نہ آئے، جس پر اسپیکر قومی اسمبلی نےشدید ناراضی کو اظہار کرتے کہا کہ میں جواب نہ دینے والے نا اہل لوگوں کی وجہ سے تمام ارکان اسمبلی کو یرغمال بناکر نہیں رکھ سکتا۔اس موقع پر پاکستان پیپلز پارٹی کے رکن قومی اسمبلی نوید قمرنے اسپیکر قومی اسمبلی کو تجویز دی کہ قومی اسمبلی کا اجلاس پندرہ منٹ کیلیے ملتوی کردیا جائے،جس پر اسپیکر قومی اسمبلی نے نوید قمر کی تجویز کو قبول کرتے ہوئے اجلاس پندرہ منٹ کیلیے ملتوی کر دیا تھا۔

یہ بھی پڑھئے

سوالات کا جواب نہ ملنے پر قومی اسمبلی کا اجلاس احتجاجا ملتوی

کورم پورا نہ ہونے پر قومی اسمبلی کا اجلاس ملتوی

Comments are closed.

Scroll To Top