تازہ ترین
سینیٹ الیکشن: فاروق ستار اور رابطہ کمیٹی کی جانب سے الگ الگ امیدواروں کا اعلان

سینیٹ الیکشن: فاروق ستار اور رابطہ کمیٹی کی جانب سے الگ الگ امیدواروں کا اعلان

کراچی: ( 08 فروری، 2018) رابطہ کمیٹی کی شدید مخالفت کے باوجود متحدہ پاکستان کے سربراہ نے سینیٹر کے لئے کامران ٹیسوری کے کاغذات نامزدگی جمع کرادئیے ، جبکہ رابطہ کمیٹی نے بھی اپنے امیدواروں کا علیحدہ اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ امیدواروں کے ناموں پر رابطہ کمیٹی کے اراکین اور پارٹی سربراہ کے درمیان اختلافات برقرار ہیں،جس کے نتیجے میں پارٹی کے سربراہ فاروق ستار اور رابطہ کمیٹی نے سینیٹ الیکشن کے لیے الگ الگ امیدواروں کے ناموں کا اعلان کردیا ہے۔

کراچی کے علاقے پی آئی بی میں اپنی رہائش گاہ کے باہر میڈیا بریفنگ میں ایم کیو ایم کے سربراہ فاروق ستار نے کامران ٹیسوری، احمد چنائے، فرحان چشتی، جسٹس (ر) حسن فیروز، نگہت شکیل مرزا، منگلا شرما صاحبہ، سنجے پروانی، خواجہ سہیل منصور، قمر منصور، علی رضا عابدی اور شاہد پاشا کو سینیٹ کا ٹکٹ دینے کا اعلان کیا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فاروق ستار نے کہا کہ رابطہ کمیٹی سے کوئی اختلافات نہیں، میں نے رابطہ کمیٹی سے کہا ہے کہ اپنی اپنی مرضی کے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی جمع کرادیتے ہیں، بعد میں چار حتمی ناموں پر غور کرلیں گے، آخر میں چار پہلوان ہی اکھاڑے میں اتریں گے اور پہلوانی کریں گے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

ایم کیو ایم کے مرکز بہادر آباد جانے سے متعلق سوال کے جواب میں فاروق ستار نے کہا کہ حالات دیکھ کر فیصلہ کریں گے۔دوسری جانب ایم کیو ایم پاکستان کے مرکز بہادرآباد میں میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے رابطہ کمیٹی کی رکن سینیٹر نسرین جلیل نے سینیٹ الیکشن کے لیے اپنا، فروغ نسیم، امین الحق، عبدالقادر خانزادہ، کشور زہرا اور عامر چشتی کے ناموں کا اعلان کیا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نسرین جلیل نے کہا کہ ایم کیو ایم متحد ہے، ہم نہیں چاہتے پارٹی تقسیم ہو، خدارا فاروق ستار اس بات کو سمجھیں، دشمنوں کو خوش ہونے اور ایم کیو ایم میں اختلافات سے تمام سیٹیں جیتنے کا موقع نہ ملے، اتفاق رائے ہونے کی صورت میں آخر میں بعض نام واپس بھی لیے جاسکتے ہیں جن میں میرا نام بھی شامل ہوسکتا ہے، شخصیات کے گرد نہیں گھومنا بلکہ پارٹی کو متحد رکھ کر سینیٹ الیکشن لڑنا ہے۔نسرین جلیل کا کہنا تھا کہ ہم فاروق ستار کا انتظار کر رہے ہیں کہ وہ بہادرآباد مرکز آکر رابطہ کمیٹی سے ملیں اور اپنا موقف بیان کریں، صورتحال کو بہتر کریں کیونکہ ایم کیو ایم میں اختلافات کی وجہ سے حامیوں میں بہت بے چینی اور تشویش ہے، کامران ٹیسوری کا اپنا پس منظر ہے اور بہت سارے معاملات ہیں جنہیں میں یہاں بیان نہیں کرسکتی۔واضح رہے کہ سینیٹ انتخابات کیلئے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کا آج آخری دن ہے اور الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ کاغذات نامزدگی آج شام 4 بجے تک جمع کرائے جاسکتے ہیں۔

دوسری جانب فاروق ستار کی بھرپور حمایت حاصل کرنے والے کامران ٹیسوری نے سینیٹ کے لیئے نامزدگی کاغذات جمع کرادیئے، متحدہ رہنما کا کہنا تھا کہ فاروق بھائی جو بھی حکم کرینگے اس پر عمل کرونگا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے بعد الیکشن کمیشن کے باہر میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے کامران ٹیسوری نے کہا کہ سربراہ ایک کپتان کی طرح ہوتا ہے ،فاروق ستار کی قابلیت اور نیت پر کسی کو شک نہیں ہونا چاہیے ،وہ بغیر کسی مفاد کے کام کرتے ہیں ۔

ان کا کہنا تھا کہ اختلاف رائے سگے بھائیوں میں بھی ہوتا ہے ،ایک دوسرے کو چھوڑا نہیں جاتا ،فاروق ستار میں پارٹی کو کٹھن مراحل سے نکالنے کی سوجھ بوجھ ہے ،23اگست کو مشکل ترین دن سے بھی پارٹی کو فارو ق ستار ہی نکال کر لائے تھے ۔انہوں نے مزید کہا کہ فاروق ستار نے مجھے اعتماد دیا جس پر ان کا شکر گزار ہوں ،وہ میرے لیڈر ہیں ،اگر دستبرداری کا کہیں گے تو ایک منٹ میں کاغذات نامزدگی واپس لے لوں گا اگر نہ کہا تو پھر انتخابات لڑوں گا۔

رات گئے بہادرآباد میں ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی کا مشاورتی اجلاس ختم ہونے کے فیصل سبزواری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے سینٹ کے الیکشن میں اپنے امیدواروں کا اعلان کیا۔

رابطہ کمیٹی اراکین کی مشاورتی اجلاس کے بعد فیصل سبزواری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے سینٹ میں متحدہ کے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا جس میں فروغ نسیم،  نسرین جلیل، امین الحق،  شبیرقائم خانی،  کشور زہرہ، عبدالخالق خانزادہ اور سنجے پروانی امیدوار ہوں گے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

ایم کیو ایم کے رہنما فیصل سبزواری کا کہنا تھا کہ سب کو علم ہے کہ افسوسناک صورتحال کیوں پیش آئی۔ اقتدار سیٹوں کی بھوک ایم کیو ایم کا کلچر نہیں ہے لیکن گزشتہ ایک برس کے دوران تنظیم میں عہدوں کی بھوک پیدا ہو گئی ہے تنظیم میں فیتے کاٹنے کی بھوک پروان چڑھائی گئی۔ ہم حرص و ہوس اور نوٹوں کی سیاست کو مسترد کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سب کو معلوم ہے کہ سندھ میں سینیٹ کی سیٹ کے لیئے کروڑوں کی بولی لگتی ہے یہاں لوگ 25 25 کروڑ روپے لے کر بیٹھے ہیں لیکن ایم کیو ایم بکاؤ مال نہیں نہ ہی پاکستان مسلم لیگ کا کوئی دھڑا ہے یہ کارکنان کی جماعت ہے۔ ایم کیو ایم پر نقب زنی اور ڈاکہ ڈالنے کی کوشش کو ناکام کریں گے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

یاد رہے کہ سینیٹ کے انتخابات کیلئے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کی آج آخری تاریخ ہے، تین مارچ کو چاروں صوبائی اسمبلیوں میں پولنگ ہوگی۔

نامزدامیدواروں کے ناموں کی فہرست جمعہ کے روز جاری کی جائے گی، کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال پیر کو ہوگی جبکہ امیدوارنامزدگی کی منظوری یامسترد کئے جانے کیخلاف اس ماہ کی پندرہ تاریخ تک اپیلیں دائر کرسکتے ہیں۔

امیدواروں کی نظرثانی شدہ فہرست اس مہینے کی اٹھارہ تاریخ کو جاری کی جائے گی جبکہ کاغذات نامزدگی اس مہینے کی انیس تاریخ تک واپس لئے جاسکتے ہیں۔

مزید پڑھیے

سینیٹ انتخابات: کاغذات نامزدگی جمع کرانے کی آج آخری تاریخ

کراچی: ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی نے سینیٹ کے امیدواروں کا اعلان کر دیا

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top