تازہ ترین
میر واعظ عمر فاروق کا نئی دہلی میں این آئی اے کے سامنے پیش ہونے سے انکار

میر واعظ عمر فاروق کا نئی دہلی میں این آئی اے کے سامنے پیش ہونے سے انکار

سری نگر: (11 مارچ 2019) میر واعظ عمر فاروق نے نئی دہلی میں این آئی اے کے سامنے پیش ہونے سے انکار کردیا۔ میر واعظ کے وکیل نے این آئی اے کو خط میں کہا ہے کہ تحقیقات دہلی کی بجائے سری نگر میں کی جائیں۔ مجھے جھوٹے مفروضات اور غلط معلومات کی بنیاد پر نوٹس جاری کیا گیا ہے۔

میر واعظ کی جانب سے لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ میرے گھر پر این آئی اے نے چھاپہ مارا تو پورا تعاون کیا گیا۔ این آئی اے کی ایف آئی آر کے موضوع  کے بارے میں مجھے آگاہ نہیں کیا گیا۔

میر واعظ عمر فاروق نے کہا کہ گھر پر چھاپے کے دوران ذاتی دستاویزات، لیپ ٹاپ اور فون قبضے میں لے لیے گئے۔ تحقیقاتی ایجنسی کی طرف سے قبضے میں لی گئی اشیاء کی رسید بھی نہیں دی گئی۔ میرے قریبی عزیزوں کو بھی این آئی اے کے سامنے بلایا جاتا ہے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ دہشتگردوں کی فنڈنگ کے جھوٹے الزامات غیر منصفانہ ہیں۔ الزامات کا مقصد ڈرا دھمکا کر خاموش کرانا ہے۔ تحقیقاتی ایجنسی جھوٹا میڈیا پراپیگنڈا کر رہی ہے۔

میر واعظ عمر فاروق نے موقف اختیار کیا کہ دہلی  کے سفر کی صورت میں سیکیورٹی کے شدید مسائل موجود ہیں۔ اس صورت میں مقبوضہ وادی کے حالات مزید خراب ہوسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر کی نازک صورتحال کے پیش نظر تحقیقات نئی دہلی کی بجائے سری نگر میں کی جائیں۔ کشمیر کا تنازع سیاسی اور انسانی ہے۔ کشمیر کے مسئلے کا سیاسی حل ضروری ہے۔ کشمیر کا مسئلہ اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد سے حل ہوگا۔

حریت رہنما نے مزید کہا کہ مسئلہ کشمیر پاکستان، بھارت اور کشمیریوں کے درمیان مذاکرات سے حل ہونا چاہیئے۔ کشمیر کے پرامن حل کیلئے پاک بھارت دوستانہ تعلقات اہم ہیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top