تازہ ترین
کھوکھربرادران کی عبوری ضمانت میں 30 جنوری تک توسیع

کھوکھربرادران کی عبوری ضمانت میں 30 جنوری تک توسیع

لاہور:(19 جنوری 2019)عدالت نے قبضہ اراضی کیس میں کھوکھر برادران کی ضمانت میں 30 جنوری تک توسیع کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سیشن کورٹ میں کھوکھر برادران کیخلاف قبضہ اراضی کیس کی سماعت ہوئی،ایڈیشنل سیشن جج شہزادرضانے سماعت کی ،کھوکھر برادران عدالت میں پیش ہوئے۔

اس موقع پر کھوکھر برداران کے وکیل نے عدالت میں ان کی ضمانت میں توسیع کی استدعا کی ، جسے عدالت نے منظور کرتے ہوئے ان کی ضمانت میں 30 جنوری تک توسیع کردی،عدالت نے شفیع کھوکھر کی درخواست واپس لینے پرنمٹادی۔

واضح رہے کہ لیگی رہنما افضل کھوکھر، سیف الملوک کھوکھر اور ملک شفیع کھوکھر کے خلاف تھانہ نواب ٹاون پولیس نے قبضے کا مقدمہ درج ہے ، اس کے علاوہ سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں بھی کھوکھر برادران کے خلاف کیس زیر سماعت ہے۔

محکمہ ریونیو کے مطابق کھوکھر برادارن کی تحصیل رائے ونڈ موضع مل میں 228 کنال، سندر میں 30 کنال، تحصیل ماڈل ٹاون موضع جیڈو میں 1 ہزار 277 کنال، تحصیل سٹی موضع نیاز بیگ جوہر ٹاون میں 210 کنال اور 1 ہزار 745 کنال سے زائد اراضی مختلف تحصیلوں میں ہے۔

رپورٹ کے مطابق زمینوں کی ٹرانسفر قانونی طریقہ کار کے مطابق نہیں ہوئیں، کھوکھر برداران نے پہلے زمینوں پر قبضہ کیا بعد میں ٹرانسفر کروائیں، 77 کنال پر مشتمل کھوکھر پیلس 2005ء میں تعمیر ہوا اور اس کی رجسٹریاں 2012ء میں ہوئیں، کھوکھر پیلس میں 10 کنال اراضی نالے کی جبکہ راستوں کی سرکاری زمین بھی شامل ہے۔ اسی طرح اقبال ٹاون میں غیرقانونی طور پر 2012ء میں نقشہ پاس کرایا گیا جب کہ کھوکھر برادران نے سیکڑوں ایکڑ زمینیں فروخت بھی کیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top