تازہ ترین
والد کی لاش ہمارے حوالے کی جائے، جمال خاشقجی کے بیٹوں کی درخواست

والد کی لاش ہمارے حوالے کی جائے، جمال خاشقجی کے بیٹوں کی درخواست

نیویارک: (5 نومبر 2018) ترکی میں سعودی کونسلیٹ میں قتل ہونے والے سعودی صحافی کے بیٹوں نے سعودی حکومت سے درخواست کی ہے کہ والد کی لاش ان کے حوالے کی جائے۔

امریکہ میں ایک ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے جمال خاشقجی کے بیٹوں کا کہنا تھا کہ والد کے لاپتہ ہونے کے بعد کا وقت بہت کڑا تھا صورتحال واضح نہ ہونے سے بھی تکلیف میں اضافہ ہوا۔ عبداللہ خاشقجی اور صلاح خاشقجی نے سعودی حکومت نے درخواست کی کہ ان کے والد کا جسد خاکی ان کو دیا جائے تاکہ وہ اس کی تدفین مدینہ میں کی جائے۔سی این این کو انٹرویو دیتے ہوئے صلاح خاشقجی کا کہنا تھا کہ وہ چاہتے ہیں کہ ان کے والد کی تدفین مدینہ منورہ کے قبرستان جنت البقیع میں کی جائے اور اس حوالے سے سعودی حکام سے بات کی ہے اور امید ہے کہ ایسا جلد ہوگا۔

دونوں بھائیوں کا کہنا تھا کہ ان کے والد کو سیاسی مقاصد کی وجہ سے غلط طور پر پیش کیا گیا اور ان کا نام سیاست کے لیے استعمال کر رہے ہیں تاہم سعودی فرمانروا نے انصاف کی فراہمی کا کہا ہے جس پر ہمیں یقین ہے۔ترکی کے پراسیکیوٹر جنرل نے صحافی جمال خاشقجی کے قتل کی تفصیلات جاری کرتے ہوئے بتایا تھا کہ خاشقجی کو سعودی قونصل خانے میں داخلے کے بعد دبوچا گیا اور گلا دباکر مارا گیا جس کے بعد لاش کو ٹکڑے کر کے ٹھکانہ لگایا گیا۔

سعودی صحافی جمال خاشقجی 2 اکتوبر کو ترکی کے شہر استنبول میں واقع سعودی عرب کے کونسل خانے گئے تھے جس کے بعد وہ لاپتہ ہوگئے۔ انہیں شادی کرنے کے لیئے کچھ قانونی کاغذات کی تصدیق کی ضرورت تھی جو سعودی کونسل خانے سے ہونے تھی۔

یہ بھی پڑھیے

جمال خشوگی کے قتل کا حکم سعودی حکام نے دیا، ترک صدر کا دعویٰ

صحافی جمال خشوگی خطرناک انتہا پسند تھا، سعودی ولی عہد محمد بن سلمان

Comments are closed.

Scroll To Top