تازہ ترین
اسرائیلی فوج نے فلسطینی گاؤں تباہ کردیا، فائرنگ سے 2 فلسطینی شہید

اسرائیلی فوج نے فلسطینی گاؤں تباہ کردیا، فائرنگ سے 2 فلسطینی شہید

لندن: (20 ستمبر 2018) اسرائیلی فوج نے مقبوضہ غرب اردن میں فلسطینی خانہ بدوشوں کا گاؤں خان الاحمر تباہ کردیا جبکہ پرامن مظاہرین پر فائرنگ سے دوفلسطینی شہید ہوگئے۔ اقوامِ متحدہ اور یورپی پارلیمان نے اس کی مذمت کرتے ہوئے جبری انخلا کو جنگی جرم قرار دیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اسرائیلی عدالت کی اجازت کے بعد غرب اردن میں صیہونی فوج اور بلڈوزر داخل کر دیئے اور گاؤں الاحمر کے گھروں کو مسمارکردیا۔ اسرائیل نئی زمین پر یہودی آبادکاروں کیلئے گھر تعمیر کرے گا۔ اس سے پہلے صہیونی فوج نےغزہ میں پُرامن مظاہرین پرگولیاں برسائیں اور دو نہتے فلسطینوں کوشہید کردیا۔ فائرنگ سے متعددفلسطینی زخمی بھی ہوئے۔ باہمت فلسطینی شخص نے فورسز کےپہروں کےباوجود مسجد اقتصیٰ میں نمازپڑھنا نہیں چھوڑی۔اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتیرس اور یورپی یونین پارلیمنٹ فلسطینیوں کے گاؤں کو مسمار کرنے کے اسرائیلی عمل کی مذمت کی اور کہاکہ زمین پر قبضہ جبری طور پر فلسطینیوں کو بے گھر کرنا جنگی جرم ہے۔

یہ بھی پڑھیے

اسرائیلی فوج کے فضائی حملے میں دو فلسطینی نوجوان شہید

اسرائیل کو فلسطینیوں کے مکانوں کومسمار کرنےسے روکاجائے،عرب لیگ

Comments are closed.

Scroll To Top