تازہ ترین
ارشاد رانجھانی قتل کیس کا مرکزی ملزم گرفتار

ارشاد رانجھانی قتل کیس کا مرکزی ملزم گرفتار

کراچی:(11 فروری 2019) ارشاد رانجھانی قتل کیس میں پولیس نے انکوائری کمیٹی کی سفارش پر قتل میں ملوث ملزم رحیم شاہ کو حراست میں لے لیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں پریس کانفرنس کے دوران ڈی آئی جی ایسٹ کا کہنا تھا کہ یوسی چیئرمین رحیم شاہ کو گرفتار کرلیا گیا ہے، واقعہ اسنیچنگ کا ہے، تحقیقاتی کمیٹی نے تمام شواہد کا تفصیلی جائزہ لیا، رحیم شاہ نے ارشاد رانجھانی کو اسپتال منتقل کرنے سے روکا جس پر اسے گرفتار کیا گیا۔

ڈی آئی جی ایسٹ نے کہا کہ رحیم شاہ کو پہلے سے درج مقدمے میں گرفتار کیا گیا ہے، اگر فیملی نے دوسری آیف آئی آر مانگی تو دوسری آیف آئی آر دے دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کا حکم ہے کہ ایک واقعے کا ایک ہی مقدمہ ہو، اہل خانہ کے کہنے پر دوسرا مقدمہ کر دیں تاہم فیصلہ عدالت کرے گی۔

ڈی آئی جی ایسٹ نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملزم اور مقتول دنوں پر مقدمات ہیں،کسی دباؤ کے بغیر کارروائی کررہے ہیں، بظاہر تو واقعہ ڈکیتی مزاحمت پرپیش آیا تھا۔

ڈی آئی جی ایسٹ کا کہنا تھا کہ رحیم شاہ پر الزام ہے کہ اس نے زخمی ارشاد کو اسپتال منتقل نہیں ہونا دیا، مختلف عینی شاہدین کے بیانات لیے گئے ہیں، ایمبولینس ڈرائیور کا بھی بیان لیا گیا ہے جب کہ موقع پر پہنچنے والے ڈیوٹی آفسر نے بھی کچھ تاخیر کی، تمام شاہدین کے بیانات عدالت میں پیش کردیں گے۔

واضح رہے کہ بھینس کالونی کے یوسی ناظم رحیم شاہ کے ہاتھوں مارے جانے والے ارشاد رانجھانی کے ورثا نے قاتل کی عدم گرفتاری پر آج دھرنے کا اعلان کررکھا ہے۔

 گذشتہ روز کراچی میں ارشاد رانجھانی کی ہلاکت پر سول سوسائٹی اور قوم پرست جماعتوں نے ریڈ زون میں گورنر ہاؤس کے قریب احتجاج کیا، مظاہرین نے قتل میں ملوث یوسی چیئرمین کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا تھا۔

مظاہرین میں بڑی تعداد میں خواتین بھی شریک تھیں جنہوں نے گورنر ہاؤس جانے کی کوشش کی تو پولیس نے روک لیا،جس کے بعد مظاہرین ریڈ زون میں فوارہ چوک کے قریب دھرنا دے کر بیٹھ گئے تھے۔

Comments are closed.

Scroll To Top