تازہ ترین
ارشاد رانجھانی کے ورثا کا آج شارع فیصل پر دھرنے کا اعلان

ارشاد رانجھانی کے ورثا کا آج شارع فیصل پر دھرنے کا اعلان

کراچی:(11 فروری 2019) چند روز قبل کراچی کے علاقے بھینس کالونی کے یوسی ناظم رحیم شاہ کے ہاتھوں مارے جانے والے ارشاد رانجھانی کے ورثا نے قاتل کی عدم گرفتاری پر آج دھرنے کا اعلان کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز کراچی میں ارشاد رانجھانی کی ہلاکت پر سول سوسائٹی اور قوم پرست جماعتوں نے ریڈ زون میں گورنر ہاؤس کے قریب احتجاج کیا، مظاہرین نے قتل میں ملوث یوسی چیئرمین کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا تھا۔

مظاہرین میں بڑی تعداد میں خواتین بھی شریک تھیں جنہوں نے گورنر ہاؤس جانے کی کوشش کی تو پولیس نے روک لیا،جس کے بعد مظاہرین ریڈ زون میں فوارہ چوک کے قریب دھرنا دے کر بیٹھ گئے تھے۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ قتل میں ملوث یوسی چیئرمین کو فوری گرفتار اور کیس کی تفتیش میں پولیس کے کردار کو واضح کیا جائے،کراچی سٹی الائنس اور فرینڈز آف لیاری کے کنوینر حبیب جان بلوچ نے بھی احتجاج میں شرکت کرکے مظاہرین سے اظہار یکجہتی کیا تھا۔

مظاہرین نے گورنر ہاؤس پرامن مظاہرے کے بعد کل تک کے لئے موخر کردیا تھا۔

دوسری جانب گذشتہ روز ہی ایڈیشنل آئی جی کراچی امیرشیخ کی تشکیل کردہ کمیٹی نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا تھا،کمیٹی میں ڈی آئی جی ایسٹ عامر فاروقی،ایس ایس پی ایسٹ اظفر مہیسر اور ایس ایس پی انویسٹی گیشن ملیر فرخ رضا شامل تھے۔

کمیٹی کے اراکین نے تھانے میں موجود واقعے سے متعلق تمام ریکارڈ کا جائزہ لیا تھا، کمیٹی اراکین نے ایدھی ایمبولینس کے ڈرائیور کا بیان بھی ریکارڈ کیا تھا جبکہ کمیٹی نے واقعہ سے متعلق تمام CCTV فوٹیج، سوشل میڈیا پر چلنے والے وڈیوز کلپس سمیت دیگر تکنیکی شواہد کا بغور جائزہ لیا تھا۔

کمیٹی کے ممبران نے ارشاد رانجھانی کے لواحقین سے موبائل فون پر بات چیت کی جوکہ اس وقت آبائی شہر دادو میں ہیں اور واقعہ سےمتعلق اپنا بیان آج تھانے میں ریکارڈ کرائینگے۔

Comments are closed.

Scroll To Top