تازہ ترین
مقبوضہ وادی میں جعلی آپریشن، 13 معصوم کشمیری گرفتار

مقبوضہ وادی میں جعلی آپریشن، 13 معصوم کشمیری گرفتار

سری نگر:(16 فروری 2019) مقبوضہ کشمیر میں قابض فوج نے جعلی آپریشن کرتے ہوئے تیرہ معصوم کشمیریوں کو گرفتار کرلیا ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق تمام افراد کو ضلع پلوامہ اور اسلام آباد میں جعلی سرچ آپریشن کے دوران گرفتار کیا گیا۔

دوسری جانب پلوامہ حملے کے بعد انتہا پسندوں کو مسلم مخالف کارروائیوں کابہانہ ہاتھ آگیا ہے اور انہوں نے جموں کے مختلف علاقوں میں مشتعل افراد نے مسلمانوں کی املاک کو نقصان پہنچانا شروع کر دیا۔

گجرنگر اور پریم نگر کے علاقوں میں پچاس گاڑیوں کو نذر آتش کیا گیا، بجرنگ دل، شیو سینا اور ویشوا ہندو پریشد کے کارکن جموں شہر کی گلیوں میں دندناتے پھر رہے ہیں، شدید کشیدگی کے باعث جموں میں شہر کرفیو نافذ کردیا گیا، موبائل اور انٹرنیٹ سروس بھی معطل کر دی گئی۔ اُدھر بھارتی یونیورسٹیوں میں زیر تعلیم کشمیری طلبہ کا جینا بھی اجیرن کر دیا۔ چھتیس گڑھ میں انتہا پسند تنظیموں سے وابستہ کارکنوں نے مسلمان طلبہ کو شدید تشدد کا نشانہ بنایا، جس کے باعث چار شدید زخمی ہو کر ہسپتال پہنچ گئے، ہاسٹل میں محصور 32 کشمیری طلبہ نے حکام سے تحفظ کی اپیل کی ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں کشمیری نوجوان نے بھارتی فوج کے قافلے پر خودکش کار حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں اب تک 49 بھارتی سیکیورٹی اہلکار ہلاک ہوچکے ہیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top