تازہ ترین
اردو ادب کے نامور مزاح نگار اور شاعر ابن انشاءکی آج 40ویں برسی

اردو ادب کے نامور مزاح نگار اور شاعر ابن انشاءکی آج 40ویں برسی

ویب ڈیسک(11جنوری،2018) اردو شاعری میں ایک منفرد تازگی،کمال جاذبیت،دلکشی اورحسن و رعنائی پیش کرنیوالے ابن انشاء کی40ویں برسی آج منائی جارہی ہے۔

اردو شعر و ادب میں بے پناہ شہرت پانے والے ابنِ اِنشاء کا اصل نام شیر محمد اور تخلص انشاء تھا۔آپ نے 15 جون 1927ء کو جالندھر کے نواحی گاؤں میں آنکھ کھولی۔ابن انشاء نے اسکول ہی کے زمانے میں شعر کہنا شروع کردیا تھا اور شیر محمد کے ساتھ “مایوس صحرائی” تخلص اختیار کیا مگرپھر بعد میں “ابنِ اِنشاء” کا قلمی نام اختیار کرلیا اور پھر اس نام سے شہرت و مقبولیت حاصل کی۔

انھوں نے غزل و نظم، سفر نامہ، طنز و مزاح اور ترجمے کے میدان میں طبع آزمائی کی اور اپنی شاعری و نثر کے وہ اَنمٹ نقوش چھوڑے کہ جن کی بنا پر اردو ادب میں ان کا نام ہمیشہ ہمیشہ کیلئے زندہ جاوید ہوگیا۔ابن انشاء کی لکھی ہوئی غزلیں نامور گلوکاروں اور غزل گائیکوں نے گنگنائیں جنہیں دنیا بھر میں شہرت حاصل ہوئی۔

وہ 1978میں آج ہی کے دن اپنے خالق حقیقی سے جاملے تھے۔ اْردو شعر و ادب کی یہ معروف شخصیت آج ہم میں نہیں مگر ان کی شعری اور نثری تخلیقات اردو ادب میں ان کا نام ہمیشہ زندہ رکھنے کیلئے کافی ہے۔

یہ بھی پڑھیے:

پاکستان سے محبت اور اس کی تعمیرکادرس دینے والے حکیم سعید شہید کی آج 97ویں سالگرہ

سلطان راہی کودنیا سے رخصت ہوئے22 برس بیت گئے

Comments are closed.

Scroll To Top