تازہ ترین
گیس بحران کا چھٹا روز: پیپلز پارٹی آج وفاق کے خلاف احتجاج کریگی

گیس بحران کا چھٹا روز: پیپلز پارٹی آج وفاق کے خلاف احتجاج کریگی

کراچی:(14 دسمبر 2018) کراچی سمیت سندھ میں گیس بحران چھٹے روز میں داخل ہوگیا ہے، جبکہ گیس کے معاملے پر پیپلزپارٹی آج وفاق کے خلاف احتجاج کرے گی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی سمیت سندھ بھر میں آج مسلسل چھٹے روز بھی گیس نایاب ہے جس کی وجہ سے سی این جی اسٹیشنز بند اور گھریلو صارفین کو ملنے والی گیس کا پریشر بھی کم ہے۔

شہر قائد میں گیس پریشر میں کمی کے باعث گھریلو صارفین شدید مشکلات کا شکار ہیں جب کہ ٹرانسپورٹر کی غیرمعینہ مدت تک ہڑتال کے باعث سی این جی بسز بھی سڑکوں پر نہ ہونے کے برابر ہیں۔

اسکول، کالجز، یونیورسٹی اور دفاتر جانے والے افراد کو پبلک ٹرانسپورٹ کی کمی کے باعث شدید مشکلات کا سامنا ہے،دوسری جانب سی این جی کی بندش کے باعث سی این جی اسٹیشنز بھی بند ہیں، سوئی سدرن حکام کا کہنا ہے آج بھی سی این جی اور گیس سپلائی معمول پر آنے کا امکان نہیں ہے۔ادھر سی این جی سٹیشنز مالکان نے گیس بحال نہ کئے جانے کی صورت میں آج سوئی سدرن کے دفتر کے باہر دھرنے کا اعلان کر رکھا ہے۔ تاہم کراچی کے دورے پر موجود وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان نے ملک بھر کے سی این جی سٹیشنز کو جلد گیس بحال کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے ۔

سی این جی ایسوسی ایشن کے رہنماؤں سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ اس مسئلے کو مستقل بنیادوں پر حل کرنے کیلئے فوری اقدامات کر رہے ہیں اور جلد ہی کسی بھی وقت بند علاقوں میں گیس سپلائی بحال ہو جائے گی۔

ادھر پیپلز پارٹی نے گیس کی فراہمی روکنے پر آج سے وفاق کے خلاف احتجاج کا اعلان کیا ہے۔

گذشتہ روز پیپلز پارٹی سندھ کے صدر نثار کھوڑو نے سندھ اسمبلی کے کمیٹی روم میں وزیر اعلٰی کے مشیر برائے اطلاعات و اینٹی کرپشن مرتضیٰ وہاب کیساتھ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ پیپلز پارٹی کے تحت سندھ کے ہر ضلعی صدر مقام پر احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا۔

امتیاز شیخ کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت سے رابطہ کیا گیا مگر گیس کی بحالی کے حوالے سے پیش رفت نہیں ہوئی۔ دریں اثنا وزیر اعلٰی سندھ نے کہا کہ گیس کا بحران سندھ کے عوام سے روزی روٹی چھیننے کے مترادف ہے ۔گھریلو صارفین ہی پریشان نہیں، صنعت کا پہیہ بھی رکا ہوا ہے۔

Comments are closed.

Scroll To Top