تازہ ترین
ایف آئی اے نے ظفر حجازی کے خلاف اہم ثبوت حاصل کرلئے

ایف آئی اے نے ظفر حجازی کے خلاف اہم ثبوت حاصل کرلئے

اسلام آباد: (17جولائی،2017)ایف آئی اے نے سیکیورٹی اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کی جانب سے چوہدری شوگر ملز کے خلاف ہونے والی انکوائری کو ٹیمپر کر نے کے شواہد حاصل کر لیئے ہیں۔

ایف آئی اے کے ذرائع کے مطابق ایس ای سی پی سے قبضے میں لیئے گئے لیپ ٹاپ کی ڈیجیٹل فارنزک اسکریننگ سے چوہدری شوگر ملز کے ریکارڈز میں ہیرا پھیری ثابت ہو گئی ہے۔ ایف آئی اے نے لیپ ٹاپ سے اصل اور تحریف شدہ ریکارڈ بحال کر کے ثبوت حاصل کرلیئے ہیں۔

ویڈیودیکھنے کےلیے پلے کا بٹن دبائیں 

سپریم کورٹ میں ایف آئی اے کی تحقیقاتی ٹیم کی جانب سے جمع کرائی گئی رپورٹ نے جے آئی ٹی کی شکایات کی تصدیق کرتے چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی کو وزیر اعظم کی ملکیت میں رہنے والی کمپنی کے ریکارڈ میں تحریف کا ذمہ دار قرار دیا گیاتھا جبکہ اپنے عہدے پر قائم چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی کا اصرار ہے کہ وہ اس معاملے میں ملوث نہیں لیکن جن افسران نے پرانی تاریخوں کے دستخط کیے تھے۔

اس سلسلے میں ایف آئی اے نے ایس ای سی پی کے ایگزیکٹو ڈائریکٹرعلی عظیم اکرم، ای ڈی عابد حسین اور ڈائریکٹر ماہین فاطمہ بطور گواہ چیئرمین ایس ای سی پی کے خلاف بیان ایف آئی اے کو ریکارڈ کراچکے ہیں، افسران کا کہنا تھا کہ انہوں نے چیئرمین کے دباؤ میں آ کر پرانی تاریخوں کے دستخط کیئے تھے۔

زرائع کا کہنا ہے کہ ایف آئی اے کی جانب سے تحویل میں لیا گیا لیپ ٹاپ ایس ای سی پی کی خاتون ڈائریکٹر مہین فاطمہ کے زیر استعمال تھا، خود ماہین فاطمہ کئی بار میڈیا پر آکر ظفر حجازی کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرچکی ہے۔

Comments are closed.

Scroll To Top