تازہ ترین
فیض آباد دھرنا کیس میں خادم حسین اور پیر افضل کی گرفتاری کا حکم

فیض آباد دھرنا کیس میں خادم حسین اور پیر افضل کی گرفتاری کا حکم

اسلام آباد: (19 مارچ 2018) انسداد دہشت گردی کی عدالت نے فیض آباد دھرنا کیس میں تحریک لبیک کے خادم حسین رضوی اور پیر افضل قادری کو گرفتار کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق انسداد دہشتگردی کی عدالت میں فیض آباد دھرنا کیس کی سماعت ہوئی۔ دوران سماعت پولیس کی جانب سے حتمی چالان پیش نہ کیے جانے پرعدالت نے سخت اظہار برہمی کا اظہار کیا اور 4 اپریل تک ملزمان کے خلاف مقدمے کا حتمی چالان جمع کرانے کا حکم دے دیا۔

اس موقع پر ملزمان کے عدالت میں پیش نہ ہونے پر بھی عدالت نے سخت برہمی کا اظہار کیا اور تحریک لبیک کے سربراہ علامہ خادم رضوی اور پیر افضل قادری کا مفرور کا اسٹیٹس برقرار رکھتے ہوئے انہیں گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم دے دیا ہے۔اس سے قبل جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے فیض آباد دھرنا کیس کی سماعت کی۔ اس موقع پر چیف کمشنر، آئی جی اسلام آباد اور ڈی جی آئی بی عدالت کے روبرو پیش ہوئے۔

سماعت کے دوران راجہ ظفر الحق کمیٹی کی رپورٹ پیش نہ کرنے پر بھی عدالت نے شدید برہمی کا اظہار کیا اور سیکرٹری دفاع کو دوبارہ رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی۔ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے کہا کہ سیکرٹری دفاع رپورٹ میں بتائیں کہ مظاہرین سے معاہدے میں آرمی چیف کا نام کیوں استعمال ہوا۔

جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ریمارکس دیے کہ عدالت میں رپورٹس جمع نہ کرانے کی صورت میں توہین عدالت کی کارروائی ہو گی۔ یاد رہے کہ ختم نبوت کے حلف نامے میں ترمیم کے معاملے پر مذہبی جماعت کی جانب سے نومبر 2017 میں 22 روز تک دھرنا دیا گیا جو بعدازاں وزیر قانون زاہد حامد کے استعفے اور ایک معاہدے کے بعد ختم ہوا۔

دھرنے کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست زیرسماعت ہے جب کہ عدالت نے آبزرویشن دی تھی کہ دھرنے کے خاتمے کے لئے کئے گئے معاہدے کی ایک شق بھی قانون کے مطابق نہیں اور جو معاہدہ ہوا اس کی قانونی حیثیت دیکھنی ہے۔

جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ریمارکس دیے تھے کہ ‘زخمی میں ہوا ہوں ریاست کو کیا حق ہے میری جگہ راضی نامہ کرے ، جس پولیس کو مارا گیا کیا وہ ریاست کا حصہ نہیں، اسلام آباد پولیس کو 4 ماہ کی اضافی تنخواہ دینی چاہیے، پولیس کا ازالہ نہیں کیا جاتا تو مقدمہ نہیں ختم ہونے دوں گا’۔

یہ بھی پڑھیے

فیض آباد دھرنا: سینیٹ میں اپوزیشن اراکین نے تحقیقات کا مطالبہ کردیا

فیض آباد دھرنا: معاہدے کو پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں لایا جائے، اسلام آباد ہائی کورٹ

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top