تازہ ترین
سمندر پار پاکستانیوں کے لئے انٹرنیٹ ووٹنگ پر ٹاسک فورس تشکیل

سمندر پار پاکستانیوں کے لئے انٹرنیٹ ووٹنگ پر ٹاسک فورس تشکیل

اسلام آباد : (19 اپریل 2018) سمندر پار پاکستانیوں کے لئے ای ووٹنگ کے معاملے پر الیکشن کمیشن نے انٹرنیٹ ووٹنگ ٹاسک فورس تشکیل دے دی، جس کا پہلا اجلاس کل ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے سمندرپار پاکستانیوں کے لیے انٹرنیٹ ووٹنگ ٹاسک فورس کی منظوری دے دی ہے، اعلامیے کے مطابق ‏ٹاسک فورس سپریم کورٹ کے حکم کی روشنی میں تشکیل دی گئی، ‏انٹرنیٹ ووٹنگ ٹاسک فورس بطورتھرڈ پارٹی نادرا کے آئی ووٹنگ سافٹ وئیر کا ٹیکنیکل آڈٹ کرے گی۔

الیکشن کمیشن کے مطابق ٹاسک فورس نادرا کے انٹرنیٹ ووٹنگ سسٹم کا جائزہ بھی لے گی، ٹاسک فورس میں ملکی اور بین الاقوامی ماہرین شامل ہیں۔الیکشن کمیشن نے چیف ایگزیکٹو آفیسر آئی ٹی بٹلر دبئی ڈاکٹر محمد منشاد ستی کی سربراہی میں یہ ٹاسک فورس قائم کی ہے۔

ذرائع الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ ٹاسک فورس دس دن میں اپنی سفارشات پیش کرے گی اور رپورٹ سپریم کورٹ کو بھی پیش کی جائے گی،جس کے بعد سمندر پار پاکستانیوں کو 2018 کے انتخابات میں ووٹ کی سہولت دینے کا فیصلہ کیا جائے گا،ٹاسک فورس کا پہلا اجلاس کل الیکشن کمیشن سیکریٹریٹ میں ہوگا‏۔

دوسری جانب الیکشن کمیشن سیکرٹریٹ میں چیف الیکشن کمیشن کی زیر صدارت حلقہ بندیوں پر اعتراضات کیس کی سماعت جاری ہے۔ الیکشن کمیشن کا پانچ رکنی بینچ سماعت کر رہا ہے۔

الیکشن کمیشن نے ضلع قصور کے 11 اور بٹگرام کے 5 اعتراضات داخل کرنیوالوں کو نوٹس جاری کئے تھے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

ذرائع الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ اعتراضات داخل کرنیوالے پیش نہ ہوئے تو ان کی غیر موجودگی میں معاملہ نمٹا دیا جائےگا ۔الیکشن کمیشن کل سندھ کے ضلع شکار پور سے موصول ہونے والے اعتراضات کی سماعت کریگا۔

واضح رہے کہ الیکشن کمیشن کو ملک بھر سے 1286 شکایات موصول ہوئیں۔ پنجاب اور اسلام آباد سے 706 شکایات موصول ہوئیں جبکہ سندھ سے 284، بلوچستان سے 104، خیبر پی کے اور فاٹا سے 192 شکایات موصول ہوئیں۔

یاد رہے الیکشن کمیشن کی جانب سے یکم مارچ کو انتخابی ضابطہ اخلاق کو مدنظر رکھتے ہوئے ہدایات جاری کی گئی ہیں جس میں تمام صوبائی حکومتوں کو پابند کیا گیا ہے کہ وہ اپنے اپنے صوبوں میں جاری اور رواں سال شروع ہونے والے ترقیاتی کاموں کے افتتاح کے موقع پر یا انکے سنگ بنیاد پر اراکین اسمبلی، صوبائی اور وفاقی وزرائ، وزراء اعلیٰ یا وزیراعظم کے ناموں کی تختیاں نصب نہ کروائیں تاکہ ملک میں پری پول رگنگ کے الزامات عائد نہ ہوسکیں۔

یہ بھی پڑھیے

الیکشن کمیشن نے قصور کی حلقہ بندیوں پر اعتراضات منظور کرلئے

الیکشن کمیشن نے سرکاری منصوبوں پر پارٹی کی تشہیر کرنے پر پابندی لگادی

 

 

Comments are closed.

Scroll To Top