تازہ ترین
ووٹ رازداری کیس میں عمران خان کی معافی قبول

ووٹ رازداری کیس میں عمران خان کی معافی قبول

اسلام آباد:(10 اگست،2018)الیکشن کمیشن نے ووٹ کی رازداری ظاہر کرنے سے متعلق کیس میں پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی معافی قبول کرتے ہوئے ان کے خلاف نوٹس واپس لے لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیف الیکشن کمشنر سردار رضا کی سربراہی میں 4 رکنی بینچ نے آج عمران خان کے خلاف ووٹ کی رازدری ظاہر کرنے سے متعلق کیس کی سماعت کی۔ الیکشن کمیشن نے عمران خان کی جانب سے بیان حلفی اور حلف نامہ دینے کے بعد کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا، جو کچھ دیر بعد سنایا گیا۔

ویڈیو دیکھنے کےلیے پلے کابٹن دبائیں

الیکشن کمیشن کے ممبر سندھ، خیبرپختونخوا اور بلوچستان نے نوٹس واپس لینے کی رائے دی، جس پر چیف الیکشن کمشنر سردار رضا نے ووٹ رازداری کیس میں عمران خان کی معافی قبول کرتے ہوئے ازخود نوٹس نمٹادیا ہے۔

ویڈیو دیکھنے کےلیے پلے کابٹن دبائیں

 گذ شتہ روز چیئرمین تحریک انصاف کے وکیل بابر اعوان نے عمران خان کی جانب سے تحریری جواب جمع کرایا جس میں کہا گیا کہ عمران خان نے جان بوجھ کرووٹ نہیں دکھایا، ان کی مرضی سے ووٹ کی تصاویر بھی نہیں لی گئیں، رش کے باعث مہر لگانے والی جگہ کا پردہ گرگیا تھا۔
جواب میں استدعا کی گئی ہے کہ ووٹ دکھانے میں میرے مؤکل کی مرضی شامل نہیں لہٰذا ووٹ کی رازداری افشا کرنے والا کیس ختم کرکے این اے ترپن سے روکا گیا نوٹی فکیشن جاری کیا جائے،جس پر الیکشن کمیشن نے بابر اعوان کی جانب سے تحریری جواب جمع کرانے کے بعد کیس کا فیصلہ محفوظ کیا۔

ویڈیو دیکھنے کےلیے پلے کابٹن دبائیں

بعد ازاں الیکشن کمیشن نے فیصلہ سناتے ہوئے عمران خان کے وکیل بابر اعوان کی جانب سے جمع کرایا گیا تحریری جواب مسترد کردیا اور چیئرمین تحریک انصاف سے بیان حلفی سمیت ان کا دستخط شدہ معافی نامہ طلب کرلیا،الیکشن کمیشن نے حکم دیا کہ عمران خان معافی نامہ اپنے دستخط کے ساتھ جمع کروائیں، کیس کی مزید سماعت کل تک ملتوی کردی۔

یاد رہے کہ  انتخابات والے دن اسلام آباد کے حلقہ 53 میں عمران خان نے اپنے دوستوں اور کارکنان کی موجودگی میں سرعام بیلٹ پیپر پر ووٹ کاسٹ کیا جو کہ الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی کھلی خلاف ورزی تھیگذشتہ روز پریذائیڈنگ آفیسر حاجی نور محمد نے الیکشن کمیشن کو بھجوائی گئی رپورٹ میں کہا تھا کہ عمران خان ووٹ ڈالنے کیلئے پولنگ اسٹیشن میں داخل ہوئے تو ان کے ہمراہ ڈیرھ سو سے زائد میڈیا اور دوسرے افراد بھی داخل ہوگئے۔ عمران خان نے ووٹ پر مہر لگانے کیلئے پردے کے پیچھے جانے کی متعدد مرتبہ کوشش کی مگر ہجوم کے باعث وہ نہیں جاسکے۔ عمران خان نے مذکورہ صورت حال میں کہا کہ میری وجہ سے پولنگ کاعمل رک گیا ہے اس لیے یہی پر کھڑے ہو کر مہر لگا دیتا ہوں۔

یہ بھی پڑھیے

عمران خان نے محمود خان کو وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ نامزد کردیا

عدالت کا این اے 73 میں خواجہ آصف کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کرنے کا حکم

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top