تازہ ترین
توہینِ عدالت کیس: فیصل رضا عابدی کی غیر مشروط معافی قبول

توہینِ عدالت کیس: فیصل رضا عابدی کی غیر مشروط معافی قبول

اسلام آباد: (19 دسمبر 2018) سپریم کورٹ آف پاکستان نے توہین عدالت کیس میں گرفتار سابق سینٹر فیصل رضا عابدی کی غیر مشروط معافی قبول کر لی ہے۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں بینچ نے توہین عدالت کیس میں فیصل رضا عابدی کی غیر مشروط معافی کی درخواست کی سماعت کی،وکیل فیصل رضا عابدی نے کہا کہ فیصل رضاعابدی نے بہت کچھ سیکھ لیاہے،عدالت سے استدعا ہے کہ سابق سینٹر کو قبول کی جائے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

جس پر جسٹس شیخ عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ جائزتنقیدپرکسی کواعتراض نہیں ہوتا،تنقیدایک حدتک ہونی چاہئے،جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا کہ ہمارے سامنے معافی کی صرف ایک درخواست تھی،تھوڑی سی احتیاط کرلیاکرلیں۔

بعد ازاں سپریم کورٹ نے فیصل رضاعابدی کی غیرمشروط معافی قبول کرتے ہوئے حکم دیا کہ معافی قبول ہونے کادیگرمقدمات پراثرنہیں ہوگا۔

اس سے قبل سترہ دسمبر کو اشتعال انگیز انٹرویو کیس میں سپریم کورٹ نے فیصل رضا عابدی پر فرد جرم عائد کی تھی جبکہ سابق سینیٹر نے صحت جرم سے انکار کیا تھا، جس پر عدالت نے آئندہ سماعت پر استغاثہ کے گواہوں کو طلب کیا تھا۔

دوران سماعت وکیل صفائی نے استدعا کی کہ فیصل رضا عابدی کی طبیعت ناساز ہے، انہیں اسپتال منتقل کیا جائے، جس پر عدالت نے فیصل رضا عابدی کا دوبارہ طبی معائنہ کروانے کا حکم دے دیا۔واضح رہے کہ اٹھارہ اپریل کو چیف جسٹس نے توہین عدالت کیس میں سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا تھا ساتھ ہی متعلقہ چینل کو بھی نوٹس جاری کیا تھا، بعد ازاں فیصل رضا عابدی نے گرفتاری دے دی تھی۔

ویڈیو دیکھنے کے لیے پلے کا بٹن دبائیے

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے سترہ اپریل کو فیصل رضا عابدی کی جانب سے عدلیہ مخالف بیان بازی کا نوٹس لیتے ہوئے سابق سینیٹر کو نوٹس جاری کیا تھا۔

اس سے ایک روز قبل پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی نے عدلیہ مخالف پروگرام نشر کرنے پر چینل فائیو کے پروگرام” نیوز ایٹ “8 پر تین ماہ کے لئے پابندی عائد کی تھی جبکہ پیمرا نے چینل فائیو کو پانچ لاکھ روپے جرمانے اور پرائم ٹائم میں معافی نشر کرنے کا حکم بھی دیا تھا۔ترجمان پیمرا کے مطابق چینل فائیو کے پروگرام نیوز ایٹ میں فیصل رضا عابدی کی جانب سے عدلیہ مخالف گفتگو نشر کرنے پر پیمرا نے تیرہ اپریل کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے تین دن میں جوابدہی اور ذاتی شنوائی کا حکم جاری کیا تھا ۔

ذاتی شنوائی کے دوران چینل کا موقف جاننے کے بعد اتھارٹی نے تین ماہ کے لئے پروگرام نیوز ایٹ 8پر پابندی عائد کر دی ، اس کے علاہو پیمرا نے چینل انتظا میہ کو واضح ہدایت جاری کیں کہ اتھارٹی کے حکمنامے کی خلاف ورزی کی صورت میں پیمرا قوانین کے تحت چینل کا لائسنس منسوخ کر دیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیے

اب اگر خون ناحق بہا تو جنازے پرہی فیصلہ ہوگا، فیصل رضا عابدی

غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے الزام میں فیصل رضا عابدی کی ضمانت منظور

Comments are closed.

Scroll To Top