تازہ ترین
خواجہ سراؤں کے شناختی کارڈ نہ بنانے پر چیف جسٹس کا از خود نوٹس

خواجہ سراؤں کے شناختی کارڈ نہ بنانے پر چیف جسٹس کا از خود نوٹس

اسلام آباد: (17 جون، 2018)چیف جسٹس پاکستان نے خواجہ سراؤں کے شناختی کارڈ نہ بنانے کا از خود نوٹس لیتے ہوئے پنجاب حکومت،چیف سیکرٹری اور اخوت فاؤنڈیشن کو کل کے لیے نوٹس جاری کردیئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے خواجہ سراؤں کے شناختی کارڈ نہ بنانے کا از خود نوٹس لے لیا ہے۔ سپریم کورٹ نے پنجاب حکومت، چیف سیکرٹری اور اخوت فاؤنڈیشن کو کل کے لیے نوٹس جاری کردیئے۔ از خود نوٹس کیس کی سماعت کل صبح گیارہ بجے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں ہوگی۔گزشتہ روز چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار عید کے دن اپنی اہلیہ کے ہمراہ لاہور میں فاونٹین ہاؤس پہنچے ، جہاں انہوں مختلف شعبہ جات کا دورہ کیا، مریضوں کی عیادت کی اور ان میں تحائف تقسیم کئے۔

اس موقع پر چیف جسٹس کا کہنا تھا فاؤنٹین ہاؤس آکر دلی سکون ملا، جب کوئی کام نہیں کرے گا تو مجبوراً کسی کوتو قوم کے لیے نکلنا پڑے گا، قوم کو قرض سے نجات، پانی فراہم کرنے پر خصوصی توجہ دینی ہے۔

فاونٹین ہاؤس کے دورے کے دوران خواجہ سراؤں نے چیف جسٹس سے نوٹس لینے کی اپیل کی تھی اور بتایا کہ پاکستانی شہری ہونے کے باوجود ان کو بنیادی حقوق حاصل نہیں نادرا انہیں شناختی کارڈ جاری نہیں کر رہا۔

یہ بھی پڑھیے

طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کیس سپریم کورٹ میں سماعت کیلئے مقرر

پرویز مشرف کے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کا عبوری حکم واپس

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top