تازہ ترین
زیرالتوا مقدمات ختم ہو جائیں اگر حکومت ججز کی خالی آسامیاں پر کر دے، چیف جسٹس

زیرالتوا مقدمات ختم ہو جائیں اگر حکومت ججز کی خالی آسامیاں پر کر دے، چیف جسٹس

اسلام آباد: (8 مارچ 2019) چیف جسٹس آصف سعید خان کھوسہ کے دیوانی مقدمہ میں اہم ریمارکس۔ عدالتوں میں 25 فیصد خالی ججز کی آسامیاں پر کر دی جائیں تو زیر التواءمقدمات ایک دو سال میں ختم ہوجائیں گے۔

چیف جسٹس آصف سعید خان کھوسہ کے دیوانی مقدمہ میں اہم ریمارکس دیتے ہوئے کہنا تھا کہ اکیس سے بائیس کروڑ کی آبادی کے لیے صرف تین ہزار ججز ہیں۔ گزشتہ ایک سال میں سپریم کورٹ نے چھبیس ہزار مقدمات نمٹائے ہیں۔ عدالتوں میں اب زیر التواء مقدمات کی تعداد انیس لاکھ ہوگئی ہے۔ ججز کی کمی کے باوجود ہمارے ججز زیر التواء مقدمات نمٹانے کی بھرپور کوشش کر رہے ہیں۔ امریکہ کی سپریم کورٹ نے گزشتہ ایک سال میں صرف اسی سے نوے مقدمات نمٹائے ہیں۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ عدالتوں میں پچیس فیصد خالی ججز کی آسامیاں پر کر دی جائیں تو زیر التواءمقدمات ایک دو سال میں ختم ہوجائیں گے۔ زیر التواء مقدمات کا طعنہ عدالتوں کو دیا جاتا ہے۔ زیر التواء مقدمات کی قصور وار عدالتیں نہیں کوئی اور ہے۔

Comments are closed.

Scroll To Top