تازہ ترین
چوہدری نثار نے ڈان لیکس رپورٹ پبلک کرنے کی دھمکی دے دی

چوہدری نثار نے ڈان لیکس رپورٹ پبلک کرنے کی دھمکی دے دی

ٹیکسلا: (10 فروری 2018) سابق وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ اگرجماعت کی جانب سے ڈان لیکس کے معاملے پر سینٹرل ایگزیٹو کمیٹی کا اجلاس نہ بلایا گیا تو رپورٹ کو پبلک کردونگا۔

ٹیکسلا میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ
مریم نوز اور نواز شریف پر کبھی تنقید نہیں کی، البتہ مریم نواز کی سرپرستی میں پارٹی میں کام نہیں کرسکتا، مجھے شہباز شریف اور نواز شریف دونوں قبول ہیں۔

چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ پارٹی معاملات سے دلبرداشتہ ہو کر خود کو تھوڑا سائیڈ پر کیا ہےان کا کہنا تھا کہ میں نے پارٹی کو جو مشورے دیئے وہ خفیہ نہیں، مسلم لیگ (ن) میں میرا کردار نواز شریف کے ناقد کے طور پر رہا ہے، میں نے جو مشورے دیئے وہ کابینہ کی میٹنگ میں دیئے، جبکہ پاناما کیس کی ابتداء سے ہی میرے مشورے ریکارڈ پر ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پرویز رشید نامی شخصیت 90کی دہائی میں پارٹی میں آئی، اب وہ کھلم کھلا کہہ رہے ہیں کہ مجھے پارٹی سے نکلوا دیں گے۔

چودھری نثار نے سوال کیا، ‘ڈان لیکس کمیٹی نے پرویز رشید کو بحال کیوں نہیں کیا؟ راؤ تحسین اور طارق فاطمی کا تو میری رپورٹ میں ذکر نہیں تھا انھیں کس نے نکالا ہے؟چوہدری نثار نے پارٹی کو چلانے کےحوالے سے خدشات اور تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی کو کتنا نقصان ہوگا چند ماہ میں سامنے آ جائے گا۔

ایم کیو ایم میں ہونے والی دھڑے بندیوں سے متعلق چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ کسی جماعت میں اس طرح کی توڑ پھوڑ تشویش کا باعث ہوتی ہے،  ایم کیو ایم ایک سیاسی جماعت ہے اور مجھے امید ہے کہ وہ معاملات خود حل کر لے گی۔اس سے قبل پرویز رشید نے بھی نیوز لیکس کی رپورٹ منظرعام پر لانے کا مطالبہ کیا تھا سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ نیوز لیکس رپورٹ سے ان کا کوئی تعلق نہیں بنتا رپورٹ منظر عام پر ضرور آنی چا ہئے۔

سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کے بیان پر ردعمل میں سینیٹر پرویز رشید کا کہنا تھا کہ مجھ پرخبر نہ رکوانے کا الزام لگایا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ مجھے تو نیوز لیکس رپورٹ آنے بلکہ جےآئی ٹی بننے سے پہلے ہی نکال دیا گیا تھا۔

پرویز رشید کا مزید کہنا تھا کہ رپورٹ لکھنے والوں نے مجھے نکالنے کی وجہ اچھی طرح ثابت کرنیکی کوشش کی ہوگی، میری نوکری تو پہلے ہی چھین لی گئی تھی۔ پرویز رشید نے مطالبہ کیا کہ ڈان لیکس رپورٹ ضرور پبلک ہونی چا ہیے۔

واضح رہے کہ 18 اگست کو سینیٹر پرویز رشید کی جانب سے نجی ٹی وی چینل کو دیئے گئے انٹرویو میں سابق وزیر داخلہ کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ بعدازاں چوہدری نثار کی جانب سے بھی پرویز رشید کے بیان پر شدید ردعمل ظاہر کیا گیا تھا۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ دونوں رہنما نیوز لیکس کی رپورٹ منظر عام پر لانے کے خواہش مند ہیں۔

یہ بھی پڑھئے

اختلاف رائے پر وزارت سے علیحدگی اختیار کی ، چوہدری نثار

پرویز رشید کے بیان پر چوہدری نثار کے ترجمان کا سخت ردعمل

Comments are closed.

Scroll To Top