تازہ ترین
گلوبٹ کی ڈاکٹر طاہرالقادری سے بغل گیر ہونے کی کوشش

گلوبٹ کی ڈاکٹر طاہرالقادری سے بغل گیر ہونے کی کوشش

اسلام آباد:(05دسمبر،2018) سانحہ ماڈل ٹاؤن کے دوران توڑ پھوڑ میں ملوث گلوبٹ نے آج سپریم کورٹ میں پاکستان عوامی تحریک کے قائد طاہرالقادری سے بغل گیر ہونے کی کوشش کی ۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان عوامی تحریک کے قائد طاہرالقادری سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس کی سماعت کے لیے سپریم کورٹ آئے تو وہاں موجود گلو بٹ نے اچانک انہیں گلے لگالیا اور طاہرالقادری نے گلوبٹ سے مصافحہ بھی کیا،تاہم پاکستان عوامی تحریک کے رہنماؤں نے گلوبٹ کو پیچھے دھکیل دیا۔ گلوبٹ نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے روز لاہور میں منہاج القرآن کے دفتر کے باہر توڑ پھوڑ کی تھی۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

یاد رہے کہ چار اکتوبر دوہزار چودہ کو ماڈل ٹاؤن میں پاکستان عوامی تحریک اور تحریک منہاج القران سیکریٹریٹ پر 17 جون کو پولیس کے ہمراہ توڑ پھوڑ کرنے والے گلو بٹ نے قوم اور پی اے ٹی کے سربراہ طاہر القادری سے معافی مانگی تھی۔

گلوبٹ کا کہنا تھا کہ میں اپنے کیے پر شرمندہ ہوں، نہ تو میں مجرم ہوں اور نہ مجرم کا بیٹا ہوں،جو پستول اور ڈنڈا میرے پاس سے ملا وہ میری ملکیت نہیں تھا۔گلو بٹ کا کہنا تھا کہ وہ جیل میں رہ کر اپنی اصلاح کر چکے ہیں،انہوں نے میڈیا سے درخواست کی تھی کہ وہ انہیں دہشت گرد بنا کر پیش نہ کرے۔

گلو بٹ کے بیان کے بعد علامہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ میرا دل سمندر سے بھی زیادہ وسیع ہے اور کسی بڑے سے بڑے دشمن کو بھی معاف کر سکتا ہوں لیکن یہ دیکھنا پڑے گا کہ نقصان میرا ہوا ہے یا کسی کا اور کا ہوا ہے،’لہٰذا جن کا نقصان کیا ہے ان سے پوچھنا زیادہ ضروری ہے۔

یہ بھی پڑھیے

سانحہ ماڈل ٹاؤن:لاہورہائیکورٹ کاگلوبٹ کورہاکرنے کا حکم

سانحہ ماڈل ٹاؤن میں کب کیا ہوا

Comments are closed.

Scroll To Top