تازہ ترین
ارشد وہرہ دباؤ میں ہیں، وسیم اختر

ارشد وہرہ دباؤ میں ہیں، وسیم اختر

کراچی:(31اکتوبر 2017) کراچی سٹی کونسل کا اجلاس اپوزیشن اورایم کیوایم کے ارکان کے نعروں کے تبادلے کی نذرہوگیا،ایک قرارداد کی منظوری کے بعد ہی میئروسیم اخترکواجلاس ملتوی کرنا پڑگیا۔

ڈپٹی میئرارشدوہرہ کی پاکستان سرزمین پارٹی میں شمولیت سے متحدہ قومی مومنٹ پاکستان کی صفوں کے ساتھ ہی ساتھ سٹی کونسل میں بھی بھونچال آگیا ہے۔

ویڈیودیکھنے کےلیےپلےکابٹن دبائیں

آج ایوان کی کارروائی پانچ منٹ سے زیادہ نہیں چل سکی،میئرکراچی وسیم اخترکی زیرصدارت ہونے والے سٹی کونسل کے اجلاس میں دعائے مغفرت کے بعد اپوزیشن ارکان بولنا چاہتے تھے مگرمحکمہ الیکٹریکل ومیکینیکل کے لئے ایمپریس اکاؤنٹس کی قرارداد پیش کردی گئی جس پرسٹی کونسل ہال میں شورشرابے کا آغازہوا اوراسی شورشرابے میں قرارداد کثرت رائے سے منظورکرلی گئی مگراپوزیشن ارکان نے ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑڈالی اورمیئرکے خلاف نعرے بازی شروع کردی۔

اجلاس کے بعد میئر کراچی کا کہناتھااپوزیشن نے صرف میڈیا کی توجہ حاصل کرنے کے لیے اجلاس میں ہنگامہ آرائی کی۔ آج معمول کا اجلاس تھا ۔

انھوں نے دعوی کیا کہ اجلاس سے قبل ارشد وہرہ پر عدم اعتماد کی قرار داد لانے کی افواہیں تھیں لیکن ایسی کوئی قرار داد پیش نہیں کی گئی جبکہ ارشد وہرہ آج بھی میرے بھائی ہیں، وہ دباؤمیں تھےاورتاحال دباؤ میں ہیں۔

میئر کاکہناتھا کہ اگر ان کا مسئلہ حل ہوگیا تواچھی بات ہےتاہم فاروق ستار ہمیں بتا چکے تھے کہ انھوں نے پارٹی کیوں چھوڑی۔میئر نے کہا کہ ایوان میں ہماری اکثریت ہے ، ہم نے تیاری کی ہوئی ہےبھاگنے والے نہیں۔

یہ بھی پڑھیے:

میئر کراچی وسیم اختر کی زیر صدارت بلدیہ عظمیٰ کراچی کی کونسل کا اجلاس

بلدیہ عظمی صرف چوکیداری کےلیے رہ گیا، وسیم اختر

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top