تازہ ترین
افغانستان میں خفیہ ایجنسی این ڈی ایس کی پاکستان دشمنی، پاکستانیوں کا اغوا اور تشدد

افغانستان میں خفیہ ایجنسی این ڈی ایس کی پاکستان دشمنی، پاکستانیوں کا اغوا اور تشدد

اسلام آباد: (13 جنوری 2018) افغان خفیہ ایجنسی این ڈی ایس پاکستان دشمنی پر اتر آئی۔گذشتہ کئی ماہ میں افغانستان میں موجود اعلی تعلیم یافتہ پاکستانیوں کو اغوا کئے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ مغویوں کو پاکستان کے خلاف اکسایا جاتا ہے۔

افغان خفیہ ایجنسی این ڈی ایس بھی پاکستان دشمنی میں را کے نقش قدم پر چل پڑی۔ افغانستان میں موجود اعلی تعلیم یافتہ پاکستانیوں کو اغوا کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔ مغویوں کو پاکستان کے خلاف جاسوسی پر مجبور کیا جاتا ہے۔

سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ کابل میں پاکستانی سفارتخانہ نے پاکستانیوں کے اغوا کا معاملہ افغان حکومت کے ساتھ اٹھایا گیا ہے۔ سفارتی ذرائع کے مطابق این ڈی ایس کی جانب سے گزشتہ 3 ماہ میں متعدد اعلی ٰ تعلیم یافتہ پاکستانیوں کو اغوا کیا گیا۔ مغویوں میں بین الاقوامی فرمز کے ساتھ وابستہ پاکستانی بھی شامل ہیں۔ انہیں جاسوسی پر اکسایا گیا۔ انکار پر شدید تشدد کا نشانہ بھی بنایا گیا۔

ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ چارٹرڈ اکاوئنٹنٹ جنید احمد۔ ذکی احمد اور ساجد علی کو 26 نومبر کو کابل سے اغوا کیا گیا۔ شاہد اقبال13 دسمبر کو قندھار ایئرپورٹ سے اغوا کئے گئے اور انہیں 2 جنوری کو رہا کردیا گیا۔ گزشتہ 10 سال سے افغانستان میں مقیم ڈاکٹر طارق کو 15 نومبر کو اغوا کرنے کے بعد 17 نومبر کو تشدد کے بعد رہائی ملی۔ اس معاملے پر پاکستان نے افغان حکام کو آگاہ کرنے کیساتھ ساتھ شدید تحفظات کا اظہار کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

را اور این ڈی ایس پاکستان میں عدم استحکام پھیلا رہے ہیں، دفتر خارجہ میں بریفنگ

ملک دشمنوں کورا اور این ڈی ایس سےفنڈنگ ہوتی ہے، ثناء اللہ زہری

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top