تازہ ترین
جشن آزادی میں 3 دن باقی، قوم کا جوش وخروش دیدنی

جشن آزادی میں 3 دن باقی، قوم کا جوش وخروش دیدنی

ویب ڈیسک: (11 اگست،2018) پاکستان کے اکہترویں یوم جشن آذادی میں تین روز باقی ہے، یوم آزادی شایان شان طریقے سے منانے کے لئے تیاریاں بھرپورانداز میں جاری ہیں۔

تفصیلات کے مطابق تمام بڑی سرکاری اورنجی عمارتیں، سڑکیں، شاہراہیں، برقی قمقوں ، قومی پرچموں، قومی رہنماوں کی تصاویر اور بینروں سے سجاد ی گئی ہیں۔ مارکیٹوں میں خصوصی اسٹال لگائے جاچکے ہیں، جہاں یوم آزادی سے متعلقہ سامان بیجز ،قومی پرچم اور ملبوسات فروخت کئے جارہے ہیں ہر گلی کوچوں اورچوکوں میں قومی ترانوں کی گونج سنائی دے رہی ہے۔

پاکستان میں جہاں مسلمان آزادی کا جشن بھرپور انداز میں مناتے ہیں وہیں  مسیحی برادری بھی یوم آزادی کا جشن منانے میں کسی سے پیچھے نہیں ہے۔ہر سال کی طرح اس سال بھی مسلمانوں کے ساتھ ساتھ اقلیتی برادری کا جوش و خروش بھی دیدنی ہے۔

ویڈیو دیکھنے کےلیے پلے کابٹن دبائیں

آزادی کا جشن منانے کے لیے وطن کی محبت سے سرشار ہر شہری مذہب اور نسلی امتیاز سے بالاتر ہو کر جشن آزادی کی تیاریوں میں مصروف ہے۔ مسلمانوں کے ساتھ مسیحی برادری بھی وطن عزیز کی خوشیوں میں بھرپور حصہ لینے کے لیے پیش پیش ہیں۔ مسیحی برادری کا کہنا ہے کہ یہ ملک ان کا بھی اُتنا ہے جنتا کسی اور مذہب سے تعلق رکھنے والوں کا ہے۔

جشن آزادی کی تیاریوں میں نا صرف مرد بلکہ خواتین بھی مصروف ہیں۔ خواتین کا کہنا ہے کہ دن کا آغاز ہوتے ہی وہ چرچ جا کر وطن عزیز کی سالمیت اور خوشحالی کے لیے خصوصی دعائیں کرتی ہیں۔ مسیحی برادری کا کہنا ہے کہ پاکستان سے محبت ان کے دلوں میں پیوست ہے۔اور اس دن کو اپنے عقائد کا حصہ سمجھ کر مناتے ہیں۔

ویڈیو دیکھنے کےلیے پلے کابٹن دبائیے

دوسری جانب منگل کو عام تعطیل ہوگی،دن کا آغاز وفاقی دارالحکومت میں 31توپوں اور صوبائی دارالحکومتوں میں اکیس، اکیس توپوں کی سلامی سے ہوگا۔

پرچم کشائی کی مرکزی تقریب اسلام آباد کے کنونشن سینٹر میں ہوگی ، صدر ممنون حسین تقریب کے مہمان خصوصی ہوں گے ۔ اس موقع پرصدر قوم سے خطاب کریں گے۔

ویڈیو دیکھنے کےلیے پلے کابٹن دبائیں

ان میں مباحثے ،ٹاک شوز، آزادی کی تیاریوں اور جشن کے حوالے سے خصوصی رپورٹس اور تحریک پاکستان کے مختلف پہلووں کواجاگر کرنے کیلئے تجزییشامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

جشن آزادی: بازاروں میں گہما گہمی عروج پر پہنچ گئی

قیام پاکستان کی تحریک میں خواتین کی جدوجہد

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top