تازہ ترین
سندھ کو تقسیم کرنے والے خود ٹکڑے ٹکڑے ہوجائیں گے، مراد علی شاہ

سندھ کو تقسیم کرنے والے خود ٹکڑے ٹکڑے ہوجائیں گے، مراد علی شاہ

کراچی :(15جون،2017)وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے سندھ میں کسی نئے صوبے بنانے کی خواہش کو مسترد کردیا اور کہا کہ سندھ کو تقسیم کرنے والے خود ٹکڑے ٹکڑے ہوجائیں گے۔

ویڈیودیکھنے کے لیے پلے کا بٹن دبائیں 

سندھ اسمبلی اجلاس مین بجٹ پر بحث کوسمیٹتے ہوئے وزیرا علی سندھ کا کہنا تھا کہ اب دہشتگردی اور چائنا کٹنگ کا حق کسی کو نہیں دیاجائے گا۔ مئیر کراچی آٹھ ارب روپے کا حساب دیں۔انھوں نے کہا کہ سندھ کے وسیع تر مفاد کے خاطر پیپلزپارٹی نے ایم کیو ایم کے مینڈیٹ کو تسلیم کیا اور مفاہمت کے نام پر ان کے ساتھ چلے ۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ سندھ کے لوگوں کو بے وقوف بنانے کا دور گذر گیا،ایم کیو ایم میں شامل ہوکر بے وقوف ہونے والے بھی اب سمجھ گئے ہیں،لسانیت اور تقسیم کی باتیں چھوڑ کرملکر صوبے کے بہتری کیلئے کام کرنا چاہئے ۔

وزیراعلی سندھ نے نوری آباد بجلی گھر کی زمین اور اومنی گروپ سے متعلق الزامات پر اپوزیشن سے ثبوت مانگ لئےعدم فراہمی پر معافی کا مطالبہ کردیا۔

اس سے قبل قائد حزب اختلاف خواجہ اظہارالحسن نے بھی حکومت پر خوب طنز کے تیر برساتے ہوئے کہا کہ ایف آئی اے اگر سرگرم ہوتی اور دبئی پیسے نہ جاتے تو سرکلولر ریلوے کا منصوبہ مکمل ہوجاتا۔

وزیر اعلی سندھ نے فنکشنل لیگ،ن لیگ اور تحریک انصاف کو بھی کھری کھری سنادی اور کہا کہ اسمبلیاں وقت سے پہلے تحلیل نہ ہوئی تو آئندہ بجٹ بھی اس اسمبلی میں پیش ہوگی ۔

یہ بھی پڑھیے:

عوام بجلی پانی سے محروم:سندھ اسمبلی میں حکومتی شخصیات کی تنخواہوں میں اضافہ کابل منظور

سندھ اسمبلی: ایم کیو ایم کا احتجاج، دلاور قریشی کا مائیک بند کرنے پر واک آؤٹ

Comments are closed.

Scroll To Top