تازہ ترین
گیس بم گرانے کی قیاس آرائیاں غلط ہیں، چوہدری غلام سرور

گیس بم گرانے کی قیاس آرائیاں غلط ہیں، چوہدری غلام سرور

اسلام آباد: (17ستمبر 2018) وفاقی وزیر پٹرولیم چوہدری غلام سرور نے کہا ہے کہ گیس بم گرانے کی قیاس آرائیاں غلط ہیں۔ گیس کی قیمتیں بڑھا کر ایکسپورٹ کمپنی کوریلیف دیا ہے۔

وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر پٹرولیم چوہدری غلام سرور نے کہا کہ 2013ء میں گیس کمپنیاں منافع پر چل رہی تھیں۔ جبکہ 2018ء میں گیس کمپنیوں کو 152 ارب روپے خسارے کا سامنا ہے۔ گیس نیٹ ورک پر پورے پاکستان میں 23 فیصد لوگ ہیں۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

انہوں نے کہا کہ دو گیس کمپنیز کو 352 ارب روپے کا خسارہ ہے۔ ایکسپورٹ کمپنی کو گیس کی قیمتوں میں اضافہ کرکے ریلیف دیا ہے۔

چوہدری غلام سرور نے کہا کہ گیس بلوں میں مجموعی طور پر 20 سے 25 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔ عام آدمی کیلئے گیس میں 10 سے 15 روپے اضافہ کیا گیا۔ 100 کیوبک میٹر والے کا بل 480 روپے تھا، اب وہ بل 551 روپے ہوگا۔ جبکہ عام آدمی کیلئے 23 روپے فی ماہ  گیس میں اضافہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ اسی طرح 50 کیوبک میٹر گیس استعمال کرنے پر بل 252 تھا جو اب بڑھ جائے گا۔ یعنی جو 252روپے کا بل دے رہا تھا اب وہ 275 روپے بل دے گا۔

وفاقی وزیر پٹرولیم نے کہا کہ ایک ہزار 900 روپے گیس کا بل دینے والا 2 ہزار سے زیادہ بل ادا کرے گا۔چوہدری غلام سرور نے کہا کہ ایل پی جی پر تمام ٹیکس ختم کر کے 10 فیصد جی ایس ٹی لگایا ہے۔ پاکستان کی 60 فیصد آبادی ایل پی جی پرانحصار کرتی ہے تاہم ایل پی جی کی قیمت 1600 سے کم ہو کر 1400 روپے ہوجائے گی۔

وفاقی وزیر پٹرولیم نے کہا کہ گیس کی قیمتوں میں اضافے سے انڈسٹری سیکٹر آپریشنل ہوگا جس سے 5 لاکھ لوگوں کو روزگار ملے گا۔ گیس کے نرخوں سے متعلق سلیب تین سے بڑھا کر سات کردیئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بجلی کی قیمت میں کوئی اضافہ نہیں کیا جارہا۔ گیس کی قیمت میں زیادہ اضافہ بڑے صارفین کیلئے کیا گیا ہے۔

وفاقی وزیر پٹرولیم چوہدری غلام سرور نے مزید کہا کہ پہلے پنجاب کا صارف مہنگی گیس خرید رہا تھا۔ صارفین کیلئے گیس کی تیسری سلیب میں 19 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔ گیس کی قیمت میں پہلے دو سلیب پر 10 سے 15 فیصد اضافہ کیا ہے۔

اس سے قبل اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس نے گیس کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری دے دی ہے۔

اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس وزیرخزانہ اسدعمرکی صدارت میں ہوا۔ اجلاس میں گیس قیمتوں میں اضافے کی منظوری کے ساتھ اس کے سلیب میں بھی اضافہ کیا گیا۔

ویڈیودیکھنے کیلئے پلے کابٹن دبائیے

کمیٹی نے ایل پی جی کی درآمد پر ٹیکس کم کر کے 10 فیصد کردیا ہے اور جس سے ایل پی جی کی قیمت میں کمی ہوگی۔گیس قیمتوں پر اضافے پر وزیرخزانہ اسد عمر کا کہنا تھا کہ غریب صارفین پر کم از کم بوجھ ڈالا گیا ہے جبکہ امیر ترین طبقے کیلئے گیس قیمتوں میں زیادہ اضافہ کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

ای سی سی نےگیس کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری دیدی

اقتصادی رابطہ کمیٹی نے گیس کی قیمتوں میں اضافہ کا فیصلہ وزیراعظم کے سپرد کردیا

 

Comments are closed.

Scroll To Top