تازہ ترین
ڈاکٹر طاہر القادری کا رواں ہفتے احتجاج کا سلسلہ شروع کرنے کا اعلان

ڈاکٹر طاہر القادری کا رواں ہفتے احتجاج کا سلسلہ شروع کرنے کا اعلان

لاہور: (11 جنوری 2018) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری نے کہا ہے کہ قصور واقعے کے اصل مجرم شہباز شریف، رانا ثنا ءاللہ، سیکریٹری داخلہ اور آئی جی پنجاب ہیں۔ فرائض میں غفلت برتنے پر ان سب کو فوری استعفیٰ دینا ہوگا۔

لاہور میں سیاسی رہنماﺅں کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ رواں ہفتے احتجاج کا سلسلہ شروع کرنے جارہے ہیں۔ ہمارا احتجاج اب صرف سانحہ ماڈل ٹاﺅن کیلئے ہی نہیں بلکہ اب سانحہ قصور بھی ہمارے احتجاج میں شامل ہوگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت قصور میں سارے ایم این ایز اور ایم پی اے (ن) لیگ سے ہیں مگر اس کے باوجود ایسے واقعات کئی سال سے ہورہے ہیں۔طاہر القادری نے کہا کہ پنجاب میں مسلم لیگ (ن) کی حکومت ہے۔ حکمران عوام کے جان و مال کے تحفظ میں بری طرح ناکام ہو چکے ہیں۔ مسلم لیگ(ن) والے غریبوں کی اولادوں کو انسان کا بچہ نہیں سمجھتی۔ قصور میں ہونے والا واقعہ درندگی کی بدترین مثال ہے جبکہ شیخوپورہ، فیصل آباد، سرگودھا میں بھی ایسے واقعات ہوئے مگر حکمرانوں کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگی۔انہوں نے کہا کہ قصور میں احتجاج کے دوران قتل ہونے والے افراد کی ایف آئی آر میں کسی پولیس اہلکار کو نامزد نہیں کیا گیا۔ حکمرانوں نے مقتول مظاہرین کی جان کی قیمت 30، 30 لاکھ روپے لگائی ہے جس سے ان کی بے حسی اور بربریت کا پردہ چاک ہوتا ہے۔سربراہ عوامی تحریک نے مزید کہا کہ رواں ہفتے سیاسی جماعتیں احتجاج کا ایک سلسلہ شروع کر رہی ہیں۔ اس احتجاج میں اب صرف سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے شہداء کا حساب نہیں لیں گے بلکہ قصور واقعے کے متاثرین کو بھی انصاف دلا کر دم لیں گے۔

یہ بھی پڑھیے

زینب قتل کے دلخراش واقعے نے قوم کو متحد کردیا، عمران خان

زینب قتل: ملزم کی نشاندہی کرنے والے کیلئے ایک کروڑ روپے انعام کا اعلان

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top